The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں اسٹریٹ کرائم،7ملزمان گرفتار، قبرستان سے موٹرسائیکلیں مل گئیں

کراچی: شہر قائد میں اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں کم نہ ہوسکیں اور رواں سال کے آغاز سے اب تک وارداتوں میں واضح اضافہ دیکھا گیا ہے۔ موٹرسائیکل لفٹنگ، منشیات فروشی اور دیگر جرائم سے شہریوں کی زندگی اجیرن ہوگئی۔

کراچی کے علاقے شیرشاہ پولیس نے خفیہ اطلاع پر کامیاب کارروائیاں کرکے7ملزمان کو گرفتار کرلیا، مذکورہ ملزمان اسٹریٹ کرائم، موٹرسائیکل لفٹنگ اور منشیات فروشی کی وارداتوں میں ملوث ہیں۔

اس حوالے سے پولیس حکام کا کہنا ہے کہ موٹرسائیکل لفٹرز کے قبضے سے10موٹرسائیکلیں برآمد ہوئی ہیں، ملزمان نے یہ موٹرسائیکلیں پراچہ قبرستان میں چھپائی تھیں۔

پولیس کے مطابق گرفتار ہونے والے 3اسٹریٹ کرمنلز سے چھینے گئے موبائل فون جبکہ منشیات فروشی میں ملوث ملزم سے ایک کلو سے زائد چرس برآمد ہوئی ہے، ملزمان کے خلاف مقدمات درج کرکے مزید تفتیش کی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ رواں سال کی اسٹریٹ کرائمز میں اس سال اب تک کراچی کے شہری 41کروڑ سے زائد مالیت کی اشیاء سے محروم کردیے گئے،  یعنی صرف 14 ماہ میں پونے تین ارب روپے سے زائد کی اشیاء سےشہری محروم ہوئے۔

کراچی میں دہشتگردی، ٹارگٹ کلنگ کا عفریت تھما تو اسٹریٹ کرائم جیسے قابو سے ہی باہر ہو گیا اور متفقہ طور پر شہر کا سب سے بڑا چیلنج اس وقت اسٹریٹ کرائم ہے۔

گزشتہ سال 194گاڑیاں چھینی گئیں اور 1527چوری ہوئیں، چھینی گئی گاڑی کی کم سے کم قیمت 10لاکھ اور چوری کی گئی گاڑی کی اگر 3لاکھ تصور کر لی جائے تو صرف اس مد میں 67کروڑ 20 لاکھ سے زائد روپوں سے شہریوں کو محروم کردیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں