The news is by your side.

جامعہ کراچی کا تاریخ سازاقدام

بروک یونی ورسٹی کینیڈا کے ساتھ مشترکہ تجربہ گاہوں کے قیام کا معاہدہ

کراچی: بین الاقوامی مرکز برائے کیمیائی و حیاتیاتی علوم (آئی سی سی بی ایس) جامعہ کراچی اور کینیڈا کی بروک یونیورسٹی کے درمیان ایک مفاہمت کی یاد داشت پر دستخط ہوئے ہیں، جس کا مقصد دونوں ممالک کے درمیان سائنٹفک ریسرچ اور ٹیکنالوجی ڈیویپلمنٹ کے میدان میں تعاون بڑھانا ہے، جبکہ معاہدے میں مشترکہ تجربہ گاہوں کا قیام بھی شامل ہے۔

آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹرمحمد اقبال چوہدری اور بروک یونیورسٹی کے ڈین کلیہئ ریاضیات اور سائنس پروفیسر ڈاکٹرایس اعجاز احمد نے معاہدے پر دستخط ڈاکٹر پنجوانی سینٹر فار مالیکولر میڈیسن اینڈ ڈرگ ریسرچ جامعہ کراچی میں پیر کو منعقدہ ایک تقریب کے دوران کیے۔

تقریب میں ایچ ای سی پاکستان کے سابق سربراہ اور سابق وفاقی وزیر برائے سائنس اور ٹیکنالوجی پروفیسر ڈاکٹر عطا الرحمن سمیت بین الاقوامی مرکز کے دیگرآفیشل اور معروف سماجی کارکن ڈاکٹر شہاب امام بھی موجود تھے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ ٹورنٹوکینیڈا میں پاکستانی کونسل جنرل عمران احمد صدیقی اور بروک یونیورسٹی کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹرگاروین فیئرآن نے بروک یونیورسٹی کمپس میں متعلقہ معاہدے پر دستخط کیے تھے جبکہ متعلقہ معاہدے پر آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کے سربراہ کے دستخط ہونے باقی تھے۔

اس موقع پر پروفیسر ڈاکٹرمحمد اقبال چوہدری نے کہا کہ آئی سی سی بی ایس جامعہ کراچی کا شمارترقی پذیر دنیا کے بہترین حیاتیاتی اور کیمیائی علوم کے اداروں میں ہوتا ہے، انھوں نے کہا کہ بین الاقوامی مرکز اپنی نوعیت کا واحد پاکستانی تحقیقی ادارہ ہے جونہ صرف آئی ایس او سے سند یافتہ ہے بلکہ ’یونیسکوسینٹر فار ایکسلینس کیٹیگری 2 انسٹی ٹیوٹ‘کے منصب پر بھی فائز ہے۔

پروفیسر اعجاز احمد نے بین الاقوامی مرکز میں موجود تحقیقی سہولیات کی تعریف کی اور کہا کہ اس معاہدے میں مشترکہ تجربہ گاہوں کا قیام بھی شامل ہے۔ معاہدے کے تحت دونوں ممالک کے درمیان سائنسدانوں اور ٹیکنیشنوں کا باہمی تبادلہ بھی کیا جائیگا، تاکہ ماہرین کو سائنسی، تربیتی اور تحقیقی مواقع فراہم ہوسکیں، دونوں تعلیمی و تحقیقی ادارے ہر سال متعلقہ موضوعات پر مشترکہ ورکشاپ اور سمینار کا انعقاد بھی کریں گے، اس معاہدے کی مدت پانچ سال ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں