The news is by your side.

Advertisement

جامعہ کراچی خودکش حملہ: تحقیقات میں اہم پیشرفت

کراچی: جامعہ کراچی میں وین پر خودکش حملے کی تحقیقات میں اہم پیشرفت ہوئی ہے۔

ذرائع کے مطابق خودکش حملے سہولت کاری سے متعلق اطلاعات پر سیکیورٹی اداروں نے گلستان جوہر، موسمیات اور اسکیم تینتیس میں چھاپے مارے، اس دوران مشتبہ کار سوار کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خاتون حملہ آور رکشے کی مدد سے جب کراچی یونیورسٹی میں داخل ہوئی تو عین اسی وقت دو مشتبہ گاڑیوں کو انٹری پوائنٹ پر دیکھا گیا تھا، جامعہ میں داخلے پر ایک کار بغیر نمبر پلیٹ جبکہ دوسری کا نمبر موجود تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جس کارپر نمبر پلیٹ موجود تھی اس کے مالک کو حراست میں لیکر شامل تفتیش کرلیا گیا ہے۔

ادھر سندھ ڈی این اےفرانزک لیبارٹری کو جامعہ کراچی خودکش دھماکے میں مارے گئے چاروں افراد کے ڈی این اے نمونے موصول ہوگئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خودکش دھماکے میں ہلاک چاروں افراد کی لاشیں نا قابل شناخت ہیں ، شناخت میں تاخیر سےاہلخانہ کے ڈی این اے سیمپل کا دستیاب نہ ہونا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز جامعہ کراچی کے اندر ایک خاتون نے خود کش دھماکے کے ذریعے چینی باشندوں کی وین کو نشانہ بنایا تھا ، جس کے نتیجے میں تین چینی اساتذہ سمیت چارافراد جان بحق اور 3 زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں