The news is by your side.

Advertisement

گائے ذبح کرنے کے عدالتی فیصلے کیخلاف آج مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال

سری نگر : گائے ذبح کرنے کے عدالتی فیصلے کیخلاف آج بھی کشمیریوں رہنماؤں کی کال پر مکمل ہڑتال ہے۔

نام نہاد سیکولر بھارت کا گھناؤنا چہرہ پھر سامنے آگیا، مسلمانوں پر مظالم اور ان کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کیلئے مقبوضہ کشمیر میں گائے ذبح کرنے پر پابندی لگادی عدالت کے اس فیصلے پر کشمیری سراپا احتجاج ہیں۔

علی گیلانی، میرواعظ اوردیگر رہنماؤں کی کال پر مقبوضہ وادی میں آج کاروبار اور تعلیمی ادارے بند ہیں جبکہ سڑکوں پر ٹریفک نہ ہونے کے برابر ہے۔

گزشتہ روز قابض حکومت نے مظاہروں کو روکنے کے لیے میرواعظ عمر فاروق کو نظر بند کر دیا تھا جبکہ کٹھ پتلی عدالت کا حکم ہوا میں اڑاتے ہوئے دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی نے سری نگر میں سرعام گائے کے گلے پر چھری پھیری، جس کے بعد اس کا گوشت وہاں موجود لوگوں میں تقسیم کردیا گیا۔

آسیہ اندرابی کا کہنا تھا کہ گائےذبح کرنا ہمارا حق ہے، کسی کوحقوق غصب نہیں کرنے دیں گے،

یاد رہے کہ بھارتی حکومت نے مسلم اکثریتی ریاست میں گائےذبح کرنے پرپابندی عائد کر دی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں