احتساب کے عمل کو بہتر نہ کرنا ہماری مشترکہ ناکامی ہے: خواجہ آصف -
The news is by your side.

Advertisement

احتساب کے عمل کو بہتر نہ کرنا ہماری مشترکہ ناکامی ہے: خواجہ آصف

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ احتساب کا ادارہ صرف سیاستدان یا کسی مخصوص طبقے کے لیے نہیں بنا، احتساب کے عمل کو بہتر نہ کرنا ہماری مشترکہ ناکامی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایوان وفاق کی علامت ہے، یہ ایوان ہی عزت اور توقیر دیتا ہے، عوام کی حاکمیت کی علامت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایوان کو پیسے سے جوڑنا میں سمجھتا ہوں اس کی عزت کم کی گئی، اپنے سیاسی کیریئر میں کسی کو بد دعا نہیں دے سکتا۔ ’میں نے سنا ہے مشرف بیمار ہیں اللہ انہیں صحت بخشے‘۔

انہوں نے کہا کہ رنگ روڈ کا پرویز الٰہی دور میں آغاز ہوا، مکمل نہیں ہوا تھا، پورا رنگ روڈ شہباز شریف کے دور میں مکمل کیا گیا۔ 93 میں پیپلز پارٹی نے ہمیں اور 97 میں ہم نے انہیں انتقام کا نشانہ بنایا۔

خواجہ آصف نے کہا کہ ہمارے جھگڑے میں جو خلا پیدا ہوا اس سے کسی اور نے فائدہ اٹھایا، ہم نے غلطیوں سے سیکھا جو 2006 میں میثاق جمہوریت کی صورت میں سامنے آیا۔ میثاق جمہوریت پر کافی حد تک عمل درآمد کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی کی لڑائی میں ایک آمر 8 سال تک براجمان رہا، تحریک انصاف حکومت ہماری غلطیوں سے سیکھے۔ ذاتی تجربہ ہے اقتدار آتا ہے تو انسان میں رعونت اور غرور آجاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ احتساب کا ادارہ صرف سیاستدان یا کسی مخصوص طبقے کے لیے نہیں بنا، احتساب کے عمل کو بہتر نہ کرنا ہماری مشترکہ ناکامی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں