site
stats
اہم ترین

خواجہ آصف وفاقی وزیر ہونے کے ساتھ دبئی کمپنی کے ملازم نکلے

UAE iqama

اسلام آباد : پی آٹی ٹی کے رہنما عثمان ڈار نے الزام عائد کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کے خواجہ آصف وفاقی وزیر ہونے کے ساتھ دبئی کمپنی کے ملازم بھی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم کے بعد وزیر دفاع خواجہ آصف کا اقامہ بھی منظر عام پر آگیا، سیالکوٹ سے خواجہ آصف کے حلقے سے پی ٹی آئی کے امید وار عثمان ڈار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر خواجہ آصف کے اقامے کی کاپی جاری کردی، جس کے مطابق خواجہ آصف بھی دبئی کی کمپنی میں ملازم ہیں۔

پی آٹی ٹی کے رہنما عثمان ڈار کا کہنا ہے کہ خواجہ آصف سے متعلق حیرت انگیز انکشافات سامنے آئے ہیں، آرٹیکل63،62کےتحت خواجہ آصف کو بھی گھر بھیجیں گے، اقامہ ان کمپنیوں سے لیا گیا، جنہیں پروجیکٹ کی مد میں فائدہ دیا گیا۔

عثمان ڈار نے کہا کہ اقامہ کرپشن کرکے ملک سے بھاگنے کا چور راستہ رکھا گیا، پاکستان میں کرپشن کی لوٹ سیل لگانے والے باہر نوکریاں کررہے ہیں، عمران خان کا اقامہ نکلتا نون لیگ آسمان سر پر اٹھا چکی ہوتی، عمران خان کا اقامہ نہیں کیونکہ ایک ایک پیسہ ملک میں ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ خواجہ آصف سے متعلق جو دستاویزات ملی ہیں وہ حیران کن ہیں۔

دوسری جانب وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ   میں نےاقامہ 27سال سے الیکشن کمیشن اور ایف بی آر میں ڈکلیئر کیا ہوا ہے، 1983 سے بینکنگ چینلز کے ذریعے پیسہ وصول کرتا ہوں، ابو ظہبی میں1983سے بینک اکاؤنٹ بھی موجود ہے۔


مزید پڑھیں : نوازشریف وزیراعظم ہونے کے ساتھ غیر ملکی کمپنی کے ملازم بھی نکلے


یاد رہے اس سے قبل پاناما جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ وزیراعظم دبئی کی کمپنی کے ملازم تھے،  جس کے لیے دبئی کی لاء فرم نے بھی وزیراعظم نوازشریف کے کیپٹل ایف زیڈ ای کمپنی میں ملازم ہونے کے دستاویزات کی تصدیق کی تھی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top