killer ہزاروں مسلمانوں کے قاتل بوسنیا کے سابق فوجی کمانڈر کوعمرقید muslims
The news is by your side.

Advertisement

ہزاروں مسلمانوں کے قاتل بوسنیا کے سابق فوجی کمانڈر کوعمرقید

دی ہیگ : بوسنیا کے سابق فوجی کمانڈر کو مسلمانوں کی نسل کشی اور جنگی جرائم کے الزام میں عمر قید کی سزا دے دی گئی، مجرم پر سات ہزار بے گناہ مسلمانوں کے قتل عام کا جرم ثابت ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق عالمی عدالت انصاف نے بوسنیا کے سابق فوجی کمانڈر74سالہ راتکو ملادچ عرف بوسنیا کے قصائی کو عمر قید کی سزا سنادی ہے۔

بدھ کو دی ہیگ میں اقوام متحدہ کے ٹریبونل نے راتکو ملادچ کو11میں سے10الزامات میں مجرم قرار دیا۔ سابق فوجی کمانڈر نے فیصلہ سننے کے دوران ہی عدالت میں شور مچانا شروع کردیا، جس پر اسے اسی وقت عدالت سے نکال دیا گیا۔

عدالت نے ملادچ کے وکیل کی اس درخواست کو مسترد کر دیا تھا کہ ہائی بلڈ پریشر کی وجہ سے مقدمے کی کارروائی کو ملتوی کر دیا جائے، بوسنیا کے شہر سرائیوو میں سات ہزار سے زائد مسلمانوں کے قتل عام کے بعد راٹکو ملا ڈچ کو بوسنیا کے قصائی کا نام دیا گیا تھا۔

اس قتل عام کو ہالوکاسٹ کے بعد یورپ کی سرزمین پر سب سے بڑا قتل عام کہا جاتا ہے، نوے کی دہائی میں راتکو ملادچ کی سربراہی میں سربیا کی فوج نے ہزاروں مسلمانوں کے قتل عام کے ساتھ ساتھ خواتین کی آبروریزی بھی کی تھی، فیصلہ سناتے وقت مظالم کا شکار ہونے والے کئی افراد اور ہلاک ہونے والوں کے لواحقین بھی موجود تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں