وفاقی وزیرقانون زاہد حامد اپنےعہدے سےمستعفی -
The news is by your side.

Advertisement

وفاقی وزیرقانون زاہد حامد اپنےعہدے سےمستعفی

اسلام آباد : وفاقی وزیرقانون زاہد حامد نے رضا کارانہ طور پراپنا استعفیٰ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو پیش کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیرقانون زاہد حامد اپنےعہدے سے مستعفی ہوگئے، انہوں نے استعفیٰ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو پیش کردیا۔

ذرائع کے مطابق زاہد حامد نے ملک کوبحرانی کیفیت سے نکالنے کےلیے عہدے سےاستعفیٰ دیا، دھرناقائدین کو زاہد حامد کےاستعفیٰ سے متعلق آگاہ کردیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر مملکت برائے آئی ٹی انوشہ رحما ن کا استعفیٰ بھی جلد آنے کا امکا ن ہے جبکہ وفاقی وزیرقانون کےاستعفیٰ سے متعلق اعلان کچھ دیرمیں کیا جائے گا۔


فیض آباد دھرنا صورتحال پرمذاکرات کیلئے سول و عسکری قیادت متفق


وزیرقانون زاہد حامد کے اسعفے کے بعد وفاقی حکومت اور مذہبی جماعت کے درمیان معاملات طے پاگئے اور دونوں قریقین کے درمیان معاہدہ ہوگیا۔

ذرائع نے معاہدے کے حوالے سے بتایا کہ راجا ظفرالحق رپورٹ 30 دن میں منظرعام پرلائی جائے گی جبکہ الیکشن ایکٹ ترمیم کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز زاہد حامد نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں محمد شہبازشریف سے بھی اہم ملاقات کی تھی۔


فیض آباد آپریشن: پولیس اہلکارسمیت 5 افراد جاں بحق‘188 زخمی‘ فوج طلب


واضح رہے کہ فیض آباد انٹرچینج پر دھرنے کے خلاف سیکورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران مظاہرین سے جھڑپوں میں پولیس اہلکار سمیت 5 افراد جاں بحق اور 188 افراد زخمی ہوئے جبکہ پولیس نے درجنوں مظاہرین کو گرفتار کرلیا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں