The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس، ڈیلیوری پارسل سے متعلق ماہرین نے اہم احتیاطی تدبیر بتادی

لندن: کرونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کے دوران آن لائن شاپنگ کی جارہی ہے حتیٰ کہ لوگ اشیائے ضروریہ بھی گھر پر ہی آرڈر کررہے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانوی ماہرین نے لوگوں کو متنبہ کیا ہے کہ گھر پر آنے والے پارسلز پر بھی کرونا وائرس موجود ہوسکتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ پارسل گھر آنے کے بعد اسے 72 گھنٹے کے لیے ایسے ہی پڑا رہنے دیں اور پھر اسے کھولیں۔

کاغذ کی مختلف اقسام پر کرونا وائرس 72 گھنٹے تک زندہ رہ سکتا ہے

ماہرین

رپورٹ کے مطابق بیتھ، برسٹل اور ساؤتھ ہمپٹن کے تحقیق کاروں نے بتایا کہ کاغذ کی مختلف اقسام پر کرونا وائرس 72 گھنٹے تک زندہ رہ سکتا ہے چنانچہ اس دورانیے میں پارسل کو ہاتھ لگانا خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔

یونیورسٹی آف بیتھ کے پروفیسر ڈاکٹر بین اینزورتھ کا کہنا تھا ہم جانتے ہیں کہ کرونا وائرس بھی اسی طرح پھیلتا ہے جس طرح دیگر وائرس پھیلتے ہیں، اس احتیاط پر عمل کرکے ہم کرونا وائرس کے پھیلاؤ میں بہت حد تک کمی لاسکتے ہیں۔

پروفیسر پال لٹل کا کہنا تھا کہ اس سے کرونا وائرس میں بیمار ہونے والے کنبہ کے افراد کی تعداد کم کرنے میں مدد ملنی چاہئے ۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں