The news is by your side.

Advertisement

سیکڑوں پرتعیش اشیاء پر 5 تا35 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد

اسلام آباد : وفاقی حکومت نے 508 درآمدی اشیاء پر 5 سے 35 فیصد تک ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کردی، اضافی ڈیوٹی کی حامل اشیاء کی فہرست بندرگاہوں اور ائیرپورٹس کو ارسال کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق بجٹ کے دو ماہ بعد ہی منی بجٹ آگیا، ایف بی آر نے مہنگائی کا ایک اور بم عوام پر گرادیا، سیکڑوں لگژری آئٹمز پر پانچ سے پینتیس فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کردی گئی ہے۔

ایف بی آر کے مطابق یہ ڈیوٹی کسٹمز ڈیوٹی، سیلز ٹیکس اور ود ہولڈنگ ٹیکس کے علاوہ ہوگی، ریگولیٹری ڈیوٹی وصولی کے لیے اشیاء کی فہرست ملکی بندر گاہوں اور ایئر پورٹس کو بھیج دی گئی ہے۔

بجٹ سے ہٹ کر گاڑیوں اور اسلحے پر بھی ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کی گئی ہے، درآمد شدہ کھانے پینے کی اشیاء استعمال کرنے والوں کے لیے بھی بری خبر ہے کہ امپورٹڈ ٹن فوڈ یعنی ڈبوں میں بند خوراک کی درآمد پر ریگولیٹری ڈیوٹی میں پانچ فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

اس اقدام سے الیکٹرانک، الیکٹرک، کھانے پینے کی اشیاء اور میک اپ کا سامان بھی مہنگا ہوگا، علاوہ ازیں کپڑے، جوتے، مشروبات، جانوروں کی خوراک، پرفیومز، منرل واٹر،انرجی ڈرنکس پر بھی ڈیوٹی بڑھادی گئی ہے۔

مزید ازاں درآمدی کراکری، کچن آئٹمز، سگار، تمباکو، سرامکس اور باتھ روم فٹنگز پر بھی ریگولیٹری ڈیوٹی کی شرح 15 سے بڑھا کر 20 فیصد کردی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں