site
stats
عالمی خبریں

مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مسلمان بننے کیلئے تیار ہوں، میڈلین البرائٹ

واشنگٹن : امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیوں کو مخالفت کا سامنا ہے، سابق وزیرخارجہ میڈیلین البرائٹ نے خود کو بطور مسلمان رجسٹر کرانے کا اعلان کردیا۔

سابق وزیرخارجہ میڈیلین البرائٹ بھی ٹرمپ کی مسلمان دشمنی کیخلاف میدان میں آگئیں، سابق وزیر خارجہ میڈلین البرائٹ نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ وہ مسلمانوں سے اظہارِ یکجہتی کے طور پر خود کو مسلمان کے طور پر رجسٹر کرانے کو تیار ہیں، میڈلین البرائٹ کی اس ٹوئٹ کو فوری طور پر ہزاروں افراد نے لائیک کیا ہے۔

us-1

البرائٹ نے ٹوئٹر پر ٹوئٹ میں کہا کہ وہ عیسائیوں کے فرقے کیتھولک میں پرورش پائیں اور بعد وہ اسفقی بن گئیں لیکن معلوم ہوا کہ وہ اصل میں یہودی ہیں, البرائٹ کا کہنا تھا،وہ مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مسلمان بننے کیلئے تیار ہیں۔

امریکی کی پہلی خاتون وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ امریکا کے مجسمہ آزادی پر کسی قسم کی چھاپ نہیں، امریکا کو تمام مذاہب اور پس مںظر رکھنے والوں کیلئے کھلارہنا چاہئیے۔

خیال رہے کہ امریکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ ٹیم نے ڈونلڈ ٹرمپ کو تجویز دی ہے کہ امریکا میں موجود مسلمانوں کی رجسٹریشن کیلئے نیشنل سیکیورٹی اینٹری ،ایگزٹ رجسٹرین سسٹم کو دوبارہ بحال کیا جائے۔

واضح رہے کہ گیارہ ستمبر حملوں کے بعد اس سسٹم کے تحت مسلمانوں کو رجسٹرڈ کیا گیا تھا،عالمی تنظیموں اور خود مسلمانوں کے احتجاج پر اس پر عمل درآمد روک دیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top