The news is by your side.

Advertisement

کمزورانٹیلی جنس دھماکوں کا سبب بنی، سری لنکن صدر

کولمبو: سری لنکن صدر میتھری پالاسری سینا کا کہنا ہے کہ دوست ممالک کی دی گئی معلومات مجھ سے شیئرنہیں کی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکن صدر میتھری پالاسری سینا کا کہنا ہے کہ حکومت کوسری لنکا میں دھماکوں کی ذمہ داری لینی چاہئے۔

میتھری پالاسری سینا کا کہنا ہے کہ کمزورانٹیلی جنس دھماکوں کا سبب بنی، فوجی انٹیلی جنس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ چلایا جائے گا۔

سری لنکن صدر نے مزید کہا کہ دوست ممالک کی دی گئی معلومات مجھ سے شیئرنہیں کی گئیں۔

سری لنکا دھماکے، ہلاکتوں کی تعداد 359 ہوگئی

یاد رہے کہ سری لنکا میں ایسٹر کے موقع پر3 گرجا گھروں اور 4 ہوٹلوں سمیت 8 دھماکے ہوئے تھے جس میں غیرملکیوں سمیت 300 سے زائد افراد ہلاک جبکہ 400 زخمی ہوئے تھے۔

سری لنکا کے نائب وزیردفاع کے مطابق دھماکوں میں 9 خودکش حملہ آور ملوث تھے جن میں ایک خاتون بھی شامل تھی جبکہ 8 حملہ آوروں کی شناخت کی جاچکی ہے۔

سری لنکا حملے: خود کش حملہ آور کا برطانیہ و آسٹریلیا میں تعلیم حاصل کرنے کا انکشاف

وزیردفاع کا کہنا تھا کہ دھماکوں کے الزام میں 60 افراد گرفتار کیے جا چکے ہیں ان کا کہنا تھا کہ دھماکوں میں ملوث ایک بمبار نے برطانیہ اور آسٹریلیا سے تعلیم حاصل کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں