22.3 C
Ashburn
اتوار, مئی 26, 2024
اشتہار

ٹیکسز نفاذ کے خلاف ملاکنڈ ڈویژن میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کا اعلان

اشتہار

حیرت انگیز

پشاور: ملاکنڈ ڈویژن میں یکم جون سے ٹیکسز نفاذ کے خلاف تاجر برادری سراپا احتجاج بن گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق 14 مئی کو لوئر دیر سمیت ملاکنڈ ڈویژن بھر میں تاجروں نے ٹیکسز نفاذ کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے۔

اس حوالے سے انجمن تاجران تیمرگرہ کا تیمرگرہ ریسٹ ہاؤس میں ایک اجلاس منعقد ہوا، جس میں ضلعی ہیڈ کوارٹر کے تاجروں سمیت ضلع بھر سے تمام چھوٹے بڑے بازاروں کے صدور اور تاجروں نے شرکت کی۔

- Advertisement -

اجلاس میں طے پایا کہ 14مئی کو ضلع بھر میں ٹیکسز نفاذ کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کی جائے گی، اس موقع پر تاجروں نے احتجاج بھی کیا، تاجروں نے بینرز اٹھا رکھے تھے اور ٹیکسز نا منظور کے نعرے لگاتے رہے۔

مظفر آباد میں آج سستی بجلی اور آٹے پر سبسڈی کے لیے ہڑتال کا تیسرا روز، انٹرنیٹ سروس بند

انجمن تاجران تیمرگرہ کے صدر حاجی انوار الدین اور جنرل سیکریٹری حاجی لائق زادہ و دیگر نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن 1969 میں پاکستان میں ضم ہوا تھا، اور حکومت نے اس وقت ملاکنڈ ڈویژن کو 100 سالوں تک فری ٹیکس زون قرار دیا تھا۔

تاجروں نے کہا ہم حکومت کی جانب سے یکم جون سے مالاکنڈ ڈویژن میں ٹیکسز نفاذ کو مسترد کرتے ہیں، اور مطالبہ کرتے ہیں کہ حکومت ملاکنڈ ڈویژن کی فری ٹیکس زون کی جدا گانہ حثیت کو برقرار رکھے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں