The news is by your side.

Advertisement

بہتر ازدواجی حیثیت فالج سے بچاؤ کے لیے معاون

کیا آپ جانتے ہیں ایک خوشگوار ازدواجی تعلق نہ صرف آپ کو ذہنی و نفسیاتی الجھنوں سے بچاتا ہے بلکہ آپ کی صحت پر بھی مفید اثرات مرتب کرتا ہے۔

حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ کسی شخص کے فالج سے حفاظت یا بچاؤ کا تعلق اس کے موجودہ اور ماضی کی ازدواجی زندگی سے ہوسکتا ہے۔ یاد رہے کہ فالج دنیا بھر میں معذوری کا سبب بننے والی دوسری بڑی بیماری ہے۔

امریکی ماہرین کی جانب سے 5 سال تک کی جانے والی اس تحقیق میں دیکھا گیا کہ وہ افراد جو ازدواجی معاملات میں اونچ نیچ کا شکار رہے، انہوں نے شادی نہیں کی، دوبارہ شادی کی، شریک حیات سے علیحدگی اختیار کی یا ان کی موت کا صدمہ سہا، ایسے افراد میں فالج سے موت کا امکان زیادہ دیکھا گیا۔

مزید پڑھیں: فالج کے دورے کی تشخیص کیسے کی جائے؟

ماہرین کے مطابق اس کے برعکس وہ افراد جو طویل عرصے تک مستقل ایک ہی ازدواجی رشتے سے جڑے رہے ان میں فالج کے باعث موت کا خطرہ کم دیکھا گیا۔

تحقیق کے مطابق ایک غیر مستقل یا نا خوشگوار ازدواجی حیثیت عموماً فالج کے خطرے میں اضافہ کرتی ہے۔

اس سے قبل بھی امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کے جریدے میں شائع ہونے والے مضمون میں بتایا گیا کہ عمر بڑھنے کے ساتھ کوئی جذباتی سہارا، جو عموماً شریک حیات کی صورت میں دستیاب ہوتا ہے، نہ صرف فالج کے خطرے کو کم کرتا ہے بلکہ فالج ہونے کی صورت میں اس سے لڑنے میں بھی مدد دیتا ہے۔

یونیورسٹی آف یارک کے ماہرین کی ایک اور تحقیق سے پتہ چلا تھا کہ معاشرے میں تنہا رہنے والے افراد میں امراض قلب اور فالج کے خطرے کا امکان بڑھ جاتا ہے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ غیر متحرک زندگی اور ذہنی تناؤ سے لوگوں میں فالج اور دل کی بیماریوں کا امکان بڑھ جاتا ہے لیکن سماجی تنہائی لوگوں کے لیے جان لیوا ثابت ہوسکتی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان سوسائٹی آف نیورولوجی کے مطابق ملک میں صرف فالج سے روزانہ کم از کم 400 افراد کی اموات ہوتی ہیں۔ فالج کا بڑا ہدف جوان اور خواتین ہیں۔

ماہرین صحت کے مطابق فالج سے بچاؤ کی آسان ترکیب متحرک زندگی گزارنا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق دن بھر میں صرف دس منٹ کی ورزش کرنے سے فالج کا خطرہ ایک تہائی حد تک کم ہوجاتا ہے۔

مزید پڑھیں: سبزیوں اور پھلوں کا استعمال فالج سے بچاؤ میں مفید

اس کے علاوہ کھانے میں نمک اور مرغن غذاؤں کا استعمال کم کیا جائے۔ سگریٹ نوشی بھی فالج کی ایک وجہ ہے۔ اس عادت کو ترک کر کے فالج سے بچا جاسکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں