The news is by your side.

Advertisement

جرمن سفیر کی مراد سعید سے ملاقات، پاکستان پوسٹ کی کارکردگی کو سراہا

اسلام آباد: پاکستان میں متعین جرمن سفیر مارٹن کوبلر نے وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید سے ملاقات کی اور پاکستان پوسٹ کی نمایاں بہتری کو سراہا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے مواصلات مراد سعید سے مارٹن کوبلر کی ملاقات اسلام آباد میں ہوئی جس میں جرمن سفیر نے پاکستان پوسٹ کی جانب سےسروس کےمعیارمیں نمایاں بہتری پر تعریف کی۔

مارٹن کوبلر کا کہنا تھا کہ پاکستان پوسٹ بہت تیزی سےبہتری کی جانب گامزن ہے، موجودہ حکومت کےاقدامات کےنتیجےمیں سروس کامعیاربہت بہترہوا، میں نے پاکستان پوسٹ کےذریعےبرلن میں اپنےاہل خانہ کوتحفہ بھجوایا۔

جرمن سفیر کا کہنا تھا کہ تھا کہ اسلام آباد سے برلن بھیجا گیا تحفہ حیرت انگیز طور پر 7 روز اہل خانہ کو موصول ہوگیا، جس میں صرف 200 روپے خرچ ہوئے۔

وفاقی وزیر مواصلات نے جرمن سفیر کا دفتر آنے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ’پاکستان پوسٹ قوم کا بہترین اثاثہ ہے، مارٹن کوبلر کی جانب سے تعاون کی پیش کش نہایت اہم ہے جس کی قدر کرتے ہیں‘۔

مزید پڑھیں: پاکستان پوسٹ کی ساکھ میں بہتری، غیرملکی سفیر پاکستان پوسٹ استعمال کرنے لگے

اُن کا کہنا تھا کہ جرمنی کی حکومت کے ساتھ تعاون کے لیے جامع منصوبہ بندی کریں گے۔

یاد رہے کہ 8 روز قبل جرمن سفیر نے اپنے اہل خانہ کو تحفہ بھیجا تھا جس کی انہوں نے تصویر بھی سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر شیئر کی تھی۔

جرمن سفیر مارٹن کوبلر کا کہنا تھا کہ مجھے اس بات کی بہت خوشی ہے کہ پاکستان پوسٹ سامان کی ترسیل کا بااعتماد ادارہ بن چکا ہے، پاکستان پوسٹ کے ذریعے برلن میں موجود اہل خانہ کو تحفہ ارسال کیا ہے۔

مارٹن کوبلر نے ڈاک خانے پر عمدہ سہولتوں اور دوستانہ ملازمین پر مراد سعید کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اس کا سہرا وفاقی وزیر برائے مواصلات کو دیا تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں وزیر مملکت برائے مواصلات مراد سعید نے ملک بھر میں ون ڈے ڈیلیوری سسٹم کا افتتاح کیا تھا، ان کا کہنا تھا کہ پاکستان پوسٹ تقریباً 10 ارب سالانہ خسارے میں رہا ہے، پاکستان پوسٹ میں بہت صلاحیت ہے، پوسٹ کے نظام میں بہتری کی ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر مملکت نے پاکستان پوسٹ کی ون ڈے ڈیلیوری سسٹم کا افتتاح 

ان کا کہنا تھا کہ 50 ہزار روپے تک کی بھیجی گئی رقم گھر کے دروازے پر مل سکے گی۔ ون ڈے ڈیلیوری کی سہولت ابتدائی طور پر 25 شہروں میں ہوگی۔ الیکٹرانک منی آرڈر کی سہولت 80 شہروں میں دے رہے ہیں۔

وزیر مملکت نے کہا کہ پوسٹل سروسز کو جدت کی نئی راہوں پر لے جانے کا فیصلہ کیا ہے، پاکستان بھر کے ڈاک خانوں کا معیار تبدیل کریں گے۔ 13 ہزار ڈاک خانوں کو جدید ترین پوسٹل سروسز کا مرکز بنائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں