ہفتہ, جون 22, 2024
اشتہار

ذہنی صلاحیت بڑھانے کا نہایت آسان طریقہ

اشتہار

حیرت انگیز

کسی بھی انسان کیلیے ذہنی اور جسمانی صحت بنیادی اہمیت کی حامل ہوتی ہے، جسے برقرار رکھنا اور بہتر بنانے کیلئے کوشش جاری رکھنی چاہیے۔

عام طور پر لوگ دماغی صحت کو مضبوط بنانے کیلئے اچھی غذاؤں کا استعمال کرتے ہیں لیکن اگر اس کے ساتھ دیگر سرگرمیون کو بھی شامل کرلیا جائے تو نتائج مزید بہتر ہوسکتے ہیں۔

اس حوالے سے ایک تحقیق میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے کہ محض چند منٹ کی چھوٹی سی سرگرمی انسان کو پہلے سے زیادہ ہوشیار اور کام پر زیادہ توجہ مرکوز کرنے میں مدد فراہم کرسکتی ہے۔

- Advertisement -

نیورو سائنس کے مطابق کم سے کم دو منٹ کی سرگرمی بھی آپ کے دماغ کا حجم بڑھا کر واضح علمی فوائد فراہم کر سکتی ہے۔

محقین اس بات پر متفق ہیں کہ جو کچھ آپ سیکھتے ہیں اسے سیکھنا، ذہن میں برقرار رکھنا اور استعمال کرنے کی صلاحیت کو مزید بہتر بنانا ممکن ہے، وہ بھی صرف ایک معمولی سی ورزش سے۔ جس کے ذریعے آپ کی یادداشت پہلے سے زیادہ مضبوط ہوسکتی ہے۔

جرنل آف ایپیڈیمولوجی اینڈ کمیونٹی ہیلتھ میں شائع ہونے والی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جسمانی سرگرمی سے تنظیم، ترجیح اور منصوبہ بندی جیسی اعلیٰ سطح کی علمی مہارتوں کو نمایاں طور پر بہتر بنایا جا سکتا ہے۔

اگر آپ سوچ رہے ہیں کہ ’اعتدال پسند مشق‘ میں آہستہ چلنے جیسی ورزشیں شامل ہیں جیسے کہ جاگنگ، سیڑھیاں چڑھنا وغیرہ تو کسی بھی دوسری سرگرمی کے بارے میں سوچیں جو آسان نہ ہو، مگر ایسی ورزش جسے کرتے وقت آپ اپنی بات چیت جاری رکھ سکتے ہوں جیسے کہ سائیکلنگ، تیراکی، ایچ آئی آئی ٹی اور تیز دوڑنا وغیرہ۔

دوسری جانب تھوڑی سی بھی ورزش نہ کرنے کی عادت آپ کی ذہنی صلاحیتوں پر منفی اثر ڈال سکتی ہے۔ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ جو افراد چھوٹی سی بھی سرگرمی میں حصہ نہیں لیتے، ان کی یادداشت میں بہت زیادہ نہیں مگر 1 سے 2 فیصد کمی واقع ہوئی۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر آپ ہوشیار اور حاضر دماغ بننا چاہتے ہیں تو دن میں کم از کم 6 منٹ ورزش یا اس سے زیادہ وقت کے لیے ورزش کریں کیونکہ اس عمل سے ذہن کے ساتھ ساتھ جسمانی طور پر بھی آپ خود کو زیادہ توانا محسوس کریں گے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں