The news is by your side.

Advertisement

سانحہ منیٰ: شہید پاکستانیوں کی تعداد 52ہوگئی،39 تاحال لاپتہ

اسلام آباد: سانحہ منی میں باون پاکستانی حجاج کی شہادت کی تصدیق ہوگئی، انتالیس لاپتا حجاج کی تلاش کیلئے کوششیں جاری ہیں جبکہ سانحے میں شہداء کی تعداد 1200 سے تجاوز کرگئی.

رواں سال حج پر ہونے والے دوسرے دل دہلادینے والے حادثے میں شہداء کی تعدادمیں مسلسل اضافہ ہورہا ہے تو لاپتہ افراد کے اہل خانہ اچھی یا بُری خبر کے انتظار کی سولی پر لٹکے ہوئے ہیں۔

وزیرمذہبی امورسردار یوسف نے اب تک باون پاکستانیوں کے شہید ہونے کی تصدیق کر دی ہے.

لاپتہ حاجیوں کے اہلخانہ غم سے نڈھال ہیں، انہوں نےحکومت سے لاپتہ حجاج کوجلدازجلد تلاش کرنے کی اپیل کی ہے۔

شہداء اور اسپتالوں میں زیر علاج زخمیوں کی فہرست ویب سائٹ پر لگادی گئی ہے اور رابطہ نمبرز بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔

چوبیس ستمبرکو مناسک حج کے دوران منٰی میں بھگدڑ سے اب تک شہید ہونے والےحجاج کی تعداد بارہ سو سے تجاوز کرگئی ہے۔۔۔ حادثے میں سینکڑوں حاجی زخمی ہوئے جبکہ درجنوں لاپتا حجاج سے متعلق معلومات اکٹھی کرنے کا سلسلہ جاری ہے.

دوسری جانب پاکستان میں متعین سعودی سفیر کا اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو میں کہنا تھا کہ منٰی حادثہ میں سات سو ساٹھ کے لگ بھگ شہادتیں ہوئیں، سعودی عرب کو شہداء کی تعداد چھپانے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے، منیٰ حادثے کی تحقیقات جاری ہیں۔ تحقیقات کے نتائج جلد سامنے آئیں گے۔

انھوں نے کہا کہ حج ایک بڑا اجتماع ہے، جس میں دنیا بھر سے لوگ آتے ہیں یہ درست نہیں کہ زخمیوں کو اسپتال نہیں پہنچایا گیا، سعودی عرب میں علاج کی بہترین سہولیات موجود ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں