The news is by your side.

موڈرنا، فائزر اور بائیو این ٹیک کے درمیان قانونی جنگ شروع ہوگئی

انسداد کورونا وائرس ویکسین تیار کرنے والی تین بڑی کمپنیوں موڈرنا، فائزر اور بائیو این ٹیک کے درمیان قانونی جنگ شروع ہوگئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق موڈرنا نے فائزر اور بائیو این ٹیک کے خلاف امریکا کی ضلعی عدالت میساچوسٹس اور جرمنی میں ڈوسلڈورف کی عدالت میں مقدمات دائر کر دیے ہیں۔

موڈرنا نے مقدمات کمپنی کا فارمولا اور ایم آر این اے ٹیکنالوجی مبینہ طور پر استعمال کرنے پر دائر کیے ہیں۔

موڈرنا نے الزام عائد کیا ہے کہ فائزر اور بائیو این ٹیک نے کورونا ویکسین بنانے کے لیے ہماری ایم آر این اے ٹیکنالوجی کی نقل کی اور اسے استعمال کیا۔

کمپنی نے کہا کہ اس ٹکنالوجی پر 2010 سے 2016 کے دوران کام کیا، اس پر اربوں ڈالر خرچے کیے اور اسی کی مدد سے ویکیسن تیار کی، مخالف کمپنیاں ہونے والے نقصان پر جرمانہ ادا کریں۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ یہ مقدمات این آر این اے ٹیکناجولی کے تحفظ کے لیے دائر کیے ہیں کیوں کہ اسے اربوں ڈالر خرچ کر کے تیار کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں