site
stats
عالمی خبریں

برطانوی پارلیمنٹ پر مودی مخالف نعرے کی ویڈیو پراجیکشن

لندن: گجرات میں ہونے والے ہندو مسلم فسادات کے 13 سال گزرنے کے بعد بھی متاثرین کے لواحقین اس وقت کے وزیراعلیٰ گجرات اور آج کے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو معاف کرنے کے لئے تیارنہیں ہیں۔

گجرات ہنگاموں میں مارے جانے والے تین برطانوی شہریوں کے اہل خانہ نے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کے برطانیہ دورے پراپنے شدید تحفظات کا اظہارکیا ہے۔

اپنا احتجاج رجسٹرکرانے کے لئے متاثرہ خاندانوں نے برطانوی پارلیمنٹ پرایک تصویرپراجیکٹر کےذریعے نشر کی جس پربھارتی وزیراعظم نریندرمودی کی آمد کے خلاف نعرہ درج تھا۔

یہ تصویرساڑھے سات منٹ تک بارطانوی پارلیمنٹ کی عمارت پر پراجیکٹ کی جاتی رہی تاہم اس کے بعد مظاہرین کو روک دیا گیا۔

واضح رہے کہ سعید داؤد، شکیل داؤد اورمحمد اسوت نامی برطانوی شہریوں کو بھارت میں ایک ہائی وے پرزندہ جلادیا گیا تھا اوربرطانوی حکومت کبھی بھی ان کے لئے انصاف حاصل نہیں کرپائی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top