The news is by your side.

میرے پاس صرف ایک ملک کی شہریت ہے: معید یوسف

اسلام آباد: وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے نیشنل سیکورٹی ڈویژن معید یوسف نے اعتراض کرنے والوں کو جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ میرے پاس صرف ایک ملک کی شہریت ہے جس کا نام پاکستان ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق معید یوسف نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کے ذریعے پیغام میں اعتراض کرنے والوں کے منہ بند کر دیے، کہا مجھ سے متعلق من گھڑت کہانی پھیلائی گئی ہے، میرے پاس صرف ایک ملک کی شہریت ہے۔

انھوں نے ٹویٹ میں شہریت سے متعلق اقرارنامہ بھی شیئر کر دیا، کہا میں یہ انڈرٹیکنگ پہلے بھی حکومت پاکستان کو دے چکا ہوں، جب سے ذمہ داریاں سنبھالی ہیں میں امریکا واپس نہیں گیا، امریکا میں نوکری نہیں کرتا اور نہ ہی امریکا سے کماتا ہوں۔

معید یوسف کا کہنا تھا میری بیرون ملک کروڑوں کی جائیداد بھی نہیں ہے، میری اور میرے خاندان کی پاکستان کے علاوہ کہیں کوئی جائیداد نہیں، مجھ سے متعلق جھوٹ پھیلانا بند کیا جائے۔

وزیراعظم کے معاونین خصوصی اور مشیروں کے اثاثوں کی تفصیلات جاری

واضح رہے کہ وزیر اعظم کے 5 معاونین خصوصی دہری شہریت کے حامل اور 3 گرین کارڈ ہولڈر نکلے ہیں، زلفی بخاری برطانوی، شہزاد قاسم اور ندیم بابر کے پاس امریکی شہریت ہے۔ تانیہ ایدروس کینیڈا اور سنگاپور کی شہریت رکھتی ہیں، جب کہ معید یوسف اور شہباز گل گرین کارڈ ہولڈر، جب کہ ندیم افضل چن کینیڈین پی آر کارڈ ہولڈر ہیں۔

خیال رہے کہ وزیر اعظم کے 15 معاونین خصوصی و مشیران کے اثاثوں کی تفصیلات بھی جاری کی گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں