منی لانڈرنگ کیس : اومنی گروپ کے19اداروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے -
The news is by your side.

Advertisement

منی لانڈرنگ کیس : اومنی گروپ کے19اداروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے

کراچی : ایف آئی اے نے منی لانڈرنگ اسکینڈل میں اومنی گروپ کے19اداروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کردیئے، ان اکاؤنٹس میں33کروڑ روپے سے زائد رقم موجود ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے بینکنگ کورٹ میں جعلی اکاؤنٹس سے متعلق اربوں روپے کے منی لانڈرنگ اسکینڈل کی تحقیقات میں پیشرفت ہوئی ہے، ایف آئی اے کی ہدایت پر اومنی گروپ کے19اداروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے۔

رپورٹ کے مطابق ان اداروں کے بینک اکاؤئنٹس میں 33کروڑ روپے سے زائد رقوم موجود ہے، دوسری جانب اومنی گروپ نے بینک اکاؤنٹس کھولنے کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا۔

اومنی گروپ کا مؤقف ہے کہ مختلف بینکوں میں ہمارے اکاؤنٹس منجمد کردیئے گئے ہیں جبکہ مذکورہ اکاؤنٹس کا تعلق اداروں کے مالی لین دین سے ہے، اومنی گروپ کے درخواست پر عدالت نے ایف آئی اے تفتیشی افسر سے جواب طلب کرلیا، عدالت نے ایف آئی اے پراسیکیوٹر کو بھی نوٹس جاری کردیا۔

جن اداروں کے بینک اکاؤنٹس منجمد کیے گئے ہیں ان میں انصاری شوگرملز، چیمبرشوگرمل، ٹنڈوالہ یار شوگر ملز، سجاول اینگروفارمز، پاک ایتھنول، اومنی پولیمر پیکچر، اومنی پرائیویٹ لمیٹڈ، خوصکی شوگرملز, لار شوگر ملز، اومنی ایسوسی ایشن، دادو انرجی، شکارپور پاور، اومنی ویلفیئر فاؤنڈیشن بھی شامل ہیں۔

مزید پڑھیں: پاکستان منی لانڈرنگ میں ٹاپ تھری ملکوں میں سے ہے، اسٹیٹ بینک کی رپورٹ

واضح رہے کہ فارن بینک اکاؤنٹ کیس میں سپریم کورٹ میں پیش کی گئی اسٹیٹ بینک انکوائری رپورٹ کے مطابق پاکستان منی لانڈرنگ میں ٹاپ تھری ملکوں میں سے ایک ہے جبکہ رپورٹ میں5027پاکستانیوں کی دبئی میں جائیدادوں کا انکشاف بھی کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ فارن اکاؤنٹس انکوائری میں سست روی کی وجہ کمزور نظام ہے، اس کے علاوہ انکوائری میں تاخیر کی وجہ عالمی قوانین بھی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں