The news is by your side.

بچوں کو ’’منکی پاکس‘‘ بیماری کے زیادہ خطرات لاحق ہیں، نئی تحقیق

محققین نے کہا کہ چھوٹے بچوں کو خارش سے متعلق پیچیدگیوں اور جسم کے دیگر حصوں بشمول آنکھوں تک انفیکشن کے پھیلنے کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔

لندن : طبی ماہرین نے اپنی تازہ تحقیق میں کہا ہے کہ آٹھ سال یا اس سے کم عمر کے بچوں کو منکی پوکس کی زیادہ شدید بیماری کے خطرات لاحق ہوتے ہیں۔

میگزین ’’دی پیڈیاٹرک انفیکشن ڈیزیز جنرل‘‘ میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق اب تک صرف چند بچے ہی منکی پاکس سے متاثر ہوئے ہیں لیکن 8 سال یا اس سے کم عمر کے بچوں کو زیادہ خطرہ لاحق ہے۔

Monkeypox Is More Dangerous To Children" » Expat Guide Turkey

رپورٹ کے مطابق بچوں میں بہت کم شرح کے باوجود بچوں میں منکی پوکس کی پیچیدگیوں اور دیگر سنگین نتائج کے بارے میں بہت خدشات پائے جاتے ہیں۔

سوئٹز رلینڈ کی یونیورسٹی آف فرائی بورگ کی ڈاکٹر پیٹرا زیمرمین اور میلبورن یونیورسٹی سے نیگیل کرٹس نے کہا کہ بچوں کے اسپتال میں داخل ہونے کی شرح اور اعلیٰ آمدنی والے ممالک میں بھی اموات کی شرح میں اضافے کی اطلاع دی ہے۔

بنیادی طور پر کم آمدنی والے ممالک کے اعداد و شمار کی بنیاد پر 8 سال سے کم عمر کے بچوں کو خاص طور پر سنگین بیکٹیریل انفیکشن سمیت پیچیدگیوں کا زیادہ خطرہ ہوتا ہے۔

محققین نے کہا کہ چھوٹے بچوں کو خارش سے متعلق پیچیدگیوں اور جسم کے دیگر حصوں بشمول آنکھوں تک انفیکشن کے پھیلنے کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔

Is monkeypox worse in children? How severe virus is explained | NationalWorld

ماہ اگست تک دنیا بھر میں لیبارٹریز سے تقریباً 47ہزار تصدیق شدہ منکی پاکس کے کیسز سامنے آئے تھے، ان میں سے صرف 211 کیسز 18 سال سے کم اور نوعمر بچوں کے تھے۔

موجودہ وباء میں منکی پاکس وائرس زیادہ تر جنسی یا دوسرے قریبی رابطوں سے تیزی سے پھیلتا ہے۔ اس بیماری کے پھیلاؤ کے دیگر عوامل میں آلودہ سطحوں اور کچھ اشیاء کا تعین ہونا باقی ہے۔

منکی پاکس کے زیادہ تر مریض ابتدائی طور پر مناسب دیکھ بھال سے صحت یاب ہوجاتے ہیں تاہم شدید کیسز اور ہائی رسک گروپس کے لیے زیادہ مخصوص علاج ضروری ہے، یہ بات خاص طور پر8 سال سے کم عمر کے بچوں اور جلد کی بنیادی بیماریوں میں مبتلا افراد میں دیکھی گئی ہے۔

دیگر کمزور افراد میں مثلاً حاملہ خواتین، ایسے مریض جن کا مدافعتی نظام کمزور ہو اور ایگزیما کے مریضوں کے علاوہ منہ آنکھوں اور زیر ناف منکی پوکس کے دانے والے افراد شامل ہیں۔

US reports at least 31 cases of monkeypox among children - ABC News

محققین کے مطابق چیچک کی ویکسینیشن منکی پاکس کی روک تھام میں مؤثر ہے تاہم مکمل تحفظ کی مدت کا تعین نہیں کیا گیا ہے۔

منکی پاکس سے بچاؤ کے لیے ادویات یا ویکسین ان بچوں کے لیے تجویز کی گئی ہیں جو انتہائی محدود ڈیٹا’ کے ساتھ ایک بار پھر منکی وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔

خاص طور پر چونکہ مونکی پوکس غیرعلامتی بھی ہوسکتا ہے، اس لیے اس وباء کو روکا نہیں جا سکتا اور چھوٹے بچوں سمیت کمزور افراد میں پھیل سکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں