The news is by your side.

Advertisement

منکی پاکس سے متعلق نئے دعوے سے لوگوں‌ میں خوف

لندن: ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ’منکی پاکس‘ نامی بیماری کو کبھی ختم نہیں کیا جا سکتا، یہ رپورٹ سامنے آنے کے بعد لوگوں میں اس سے متعلق ایک خوف پیدا ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں ایمرجینسیز کے لیے بنے سائنسی ایڈوائزری گروپ کے ایک ایڈوائزر نے کہا ہے کہ منکی پاکس کو کبھی ختم نہیں کیا جا سکتا کیوں کہ اس کے بہت زیادہ کیسز سامنے آ رہے ہیں اور امکان ہے کہ ہمارے پالتو جانور اس وائرس کو محفوظ رکھیں گے۔

ڈیلی میل کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ منکی پاکس اب برطانیہ اور یورپ میں پاؤں جما رہا ہے، کئی ماہرین نے متنبہ کیا ہے کہ عام طور پر افریقا کے علاقوں تک محدود یہ وائرس دھیرے دھیرے دنیا بھر میں پھیل سکتا ہے۔

لندن اسکول آف ہائجین اینڈ ٹروپیکل میڈیسین کے ایڈم کچاسرکی نے کہا کہ کچھ مقامات پر منکی پاکس کے کیسز کو ختم نہیں کیا جا سکتا اور یہ سب سے بڑا خطرہ ہے۔

اس خطرے کو دیکھتے ہوئے یورپی یونین کی ہیلتھ ٹیم منکی پاکس سے متاثر سبھی ہیمسٹر، گیربل اور گنی خنزیروں کو مارنے پر غور کر رہی ہے۔

یہ بھی قابل ذکر ہے کہ جمعہ کو عالمی ادارۂ صحت کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ منکی پاکس کا وائرس 20 سے زائد ممالک میں پھیل گیا ہے، تقریباً 200 مصدقہ کیسز اور 100 سے زائد مشتبہ کیسز اب تک رجسٹرڈ کیے جا چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں