The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : شوہر سے پیسے مانگنے کے لیے ماں کا کم سن بچیوں پر تشدد

ریاض : سعودی حکام نے پیسوں کی خاطر اپنی بیٹیوں پر تشدد کرنے والی افریقی خاتون کے چنگل سے کم سن بچیوں کو آزاد کروا لیا، تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق افریقی والدہ کی جانب سے پیسوں کی خاطر کم سن بچیوں پر تشدد کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد سعودی عرب کی وزارت مزدور و سماجی ترقی نے کارروائی کرتے ہوئے جڑواں بچیوں کو ظالم ماں کے چنگل سے آزاد کروالیا ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں افریقی خاتون کو اپنی دو 9 سے 10 ماہ بچیوں پر تشدد کرتے اور اونچائی سے زمین پر گراتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے، بیچوں کے اونچائی سے زمین پر گرنے کے باعث فرش پر خون بھی دیکھا جاسکتا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک اور ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ خاتون اپنی بیٹی کا گلا دباتے ہوئے کہہ رہی ہے کہ ’میں تمہیں جان سے مار دوں گی‘۔

عرب میڈیا کا کہنا تھا کہ کم سن بچیوں پر تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد شہریوں نے سعودی عرب کی وزارت مزدور و سماجی ترقی کو ٹیگ کرکے ویڈیو کو ٹویٹر پر شیئر کیا اور بچیوں پر تشدد کرنے والی والدہ کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ بھی کیا۔

سعودی عرب کی وزارت مزدور و سماجی ترقی کے ترجمان کا کہنا تھا سعودی حکام نے کارروائی کرتے ہوئے بچیوں کو والدہ سے آزاد کروالیا ہے۔

سعودی حکام کا کہنا تھا کہ افریقی خاتون نے یمنی شخص کے ساتھ شادی کی تھی لیکن کچھ مدت کے بعد دونوں علیحدہ ہوگئے تھے، تاہم خاتون نے شوہر کی جانب سے پیسے نہ دینے پر بچیوں پر تشدد کرنا شروع کردیا اور ان کی ویڈیو بناکر یمن میں موجود اپنے سسر کو بھیجنے لگی۔

ترجمان وزارت مزدور و سماجی ترقی کا کہنا تھا کہ متاثرہ بچیاں اسپتال میں زیر علاج ہیں، جنہیں مکمل صحت یاب ہونے کے بعد والد کے رشتہ داروں کے حوالے کیا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں