The news is by your side.

Advertisement

خاتون زیادتی کیس :ملزم شفقت کا 6روزہ جسمانی ریمانڈ منظور ، مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل

لاہور : لنک روڈزیادتی کیس میں عدالت نے گرفتار ملزم شفقت کا 6روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرلیں ہیں ، ملزم شفقت ڈکیتی اورزیادتی کے جرم کا اعتراف کر چکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لنک روڈزیادتی کیس میں ملزم شفقت کو چہرے پر کپڑا ڈھانپ کر سخت سیکیورٹی میں ایڈیشنل سیشن جج مصباح خان کی عدالت میں پیش کیا گیا ، ملزم شفقت کو اےٹی سی میں جج نہ ہونےپرسیشن کورٹ میں پیش کیا، پولیس نے عدالت سے ملزم کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی۔

جس پر عدالت نے ملزم شفقت کا6روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا جبکہ زیادتی کیس میں پولیس نے دہشت گردی کی دفعات شامل کرلیں۔

پولیس کا کہنا تھا کہ شفقت نےعابدعلی سے ملکرخاتون سےدوران ڈکیتی زیادتی کی تھی، شفقت کی باضابطہ گرفتاری ڈال دی گئی جبکہ شفقت ڈکیتی اورزیادتی کےجرم کااعتراف کرچکا ہے۔

گذشتہ روز گوجرپورہ زیادتی کیس میں گرفتاری دینے والے ملزم وقارالحسن کی نشاندہی پرمرکزی ملزم عابد کےدوست شفقت کوگرفتارکرلیاگیا تھا ،ملزم شفقت نے خاتون سےزیادتی کا اعتراف کرتے ہوئے بیان میں کہا تھا کہ نوستمبر کووہ اورعابد ڈکیتی کی غرض سے کار کے پاس گئے۔۔پہلےخاتون سےلوٹ مار کی،  پھرزیادتی کا نشانہ بنایا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم شفقت نےعابد کےساتھ مل کرگیارہ وارداتیں کیں، شفقت اورعابد پنجاب کے مختلف گینگز کے ساتھ منسلک ہیں تاہم مرکزی ملزم عابد تاحال فرار ہے۔

مزید پڑھیں : گجرپورہ زیادتی کیس، گرفتار ملزم شفقت کے سنسنی خیز انکشافات

ذرائع کےمطابق ملزم شفقت کاخاندان پہلے بھی جرائم میں ملوث رہا جبکہ شفقت کا والد اللہ دتہ بھی پولیس حراست میں ہے، شفقت کی گرفتاری کے بعدکیس کےمرکزی ملزم عابد پربھی گھیراتنگ ہوگیا ، پولیس عابدکی تلاش میں جگہ جگہ چھاپےمار رہی ہے جبکہ والداوردوبھائیوں سےتفتیش کررہی ہے۔

ذرائع کے مطابق گرفتارشفقت فورٹ عباس کےنواحی گائوں164سیون آرکارہائشی تھا ، شفقت کےوالداللہ دتہ،چچا اوراس کےبھائی جرائم پیشہ لوگ تھے جبکہ شفقت کاچھوٹابھائی بابربھی ڈکیتی کی سزامیں جیل کاٹ رہاہے، شفقت کےبھائی بابرپرتھانہ فقیروالی میں مقدمہ درج ہے اور شفقت کاوالداللہ دتہ بھی جرائم کی وجہ سے زیرحراست رہا ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ گرفتارملزم شفقت کےبھائی بابرعلی پر 2019میں ڈکیتی کامقدمہ درج کیاگیاتھا، دوران واردات بابرعلی کی ٹانگ پرگولی لگی تھی فرار ہوگیا تھا ، بابرعلی کیساتھ مقدمےمیں عابدعلی شریک جرم تھا۔

خیال رہے مقدمے میں نامزد ایک اورملزم اوروقارکے برادرنسبتی عباس نےبھی گرفتاری دی ، ملزم وقار کا کہنا تھا کہ عباس مرکزی ملزم عابد کا ساتھی ہے تاہم عباس نے صحت جرم سے انکارکردیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں