ایم ایم اے میں کوئی تفریق نہیں، شامل تمام جماعتوں کی یکساں اہمیت ہے: مولانا فضل الرحمان
The news is by your side.

Advertisement

مولانا فضل الرحمان ایم ایم اے کے صدر منتخب، اتحاد میں‌ شامل تمام جماعتوں‌ کو یکساں قرار دے دیا

کراچی: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو متحدہ مجلس عمل (ایم ایم اے) کا صدر منتخب کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں مذہبی جماعت کے اتحاد ایم ایم اے کے مشترکہ اجلاس کے بعد مولانا فضل الرحمان کو اتحاد کا صدر، لیاقت بلوچ کو جنرل سیکریٹری منتخب کیا گیا۔

اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہ متحدہ مجلس عمل میں شامل تمام جماعتوں  کی یکساں اہمیت ہے، اس ضمن میں کوئی تفریق نہیں۔ پلیٹ فورم سے فیصلہ سازی میں بھی تمام جماعتوں کی برابر حیثیت ہوگی۔

فضل الرحمان نے کہا کہ ایم ایم اے کی تنظیم سازی کا جلد آغاز ہوگا،

اس وقت ملک میں بے چینی، اضطراب اور بغاوت سراٹھا رہی ہے، ضرورت ہے کہ ملک میں قیام امن کی پالیسی بنائی جائے

مولانا فضل الرحمان سربراہ جمعیت علمائے اسلام

قائدین عوام کو شیڈول سے آگاہ کریں گے، اس ضمن میں کام جاری ہے۔ نئی مردم شماری کےحساب سےآبادی 22 کروڑ کے قریب ہے، پاکستان جس مقصد کے لئے بنا تھا، اس مقصد کو اب حاصل کرنا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ اس وقت ملک میں بے چینی، اضطراب اور بغاوت سراٹھا رہی ہے، ضرورت ہے کہ ملک میں قیام امن کی پالیسی بنائی جائے، ایسی حکمت عملی بنانی ہے کہ ہرشخص، صوبے، قبیلے کو حقوق ملیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہمیں داخلی امن کی ضرورت ہے، سودی معیشت نے ہمارے معاشرتی نظام کوجکڑ لیا ہے۔


ایم ایم اے انتخابی اتحاد ہے، دیگرجماعتوں کو بھی شامل کریں گے، سراج الحق


انھوں نے کہا کہ متحدہ مجلس عمل کا تسلسل ٹوٹنا نہیں چاہیے تھا، مرکز کے بعد صوبوں، اضلاع میں تنظیم سازی شروع کریں گے، پاکستان کی بہت بڑ ی آبادی تشنگی میں مبتلا ہے، ہر صوبے کو ہر قبیلے کو انسانی حقوق کا تحفظ دیا جائے، مختلف گروپ ریاست کے خلاف بغاوت پراتر آئے ہیں۔


ایم ایم اے کے قیام سے کوئی فرق نہیں پڑے گا، ناصر حسین شاہ


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں