The news is by your side.

Advertisement

گھر سے براہ راست رپورٹنگ کے دوران اچانک بچی کی آمد

کرونا وبا کے پیش نظر مختلف اداروں نے اپنے ملازمین کو گھروں سے کام کرنے کی اجازت دی ہے جس کے دوران بالخصوص والدین کو بعض‌ اوقات پریشانی کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے۔

حال ہی میں برطانوی نشریاتی ادارے سے وابستہ خاتون صحافی بذریعہ ویڈیو لنک انٹرویو ریکارڈ کروا رہی تھیں کہ اسی دوران پیچھے سے اُن کی بچی آگئی ۔

ڈاکٹر کلیر وینہم نے انگلینڈ میں لاک ڈاؤن کی صورت حال پر بات کرنے کے حوالے سے حال ہی میں بی بی سی کی براہ راست نشریات میں حصہ لیا۔

ڈاکٹر کلیروینہم لاک ڈاؤن اور انگلینڈ میں کرونا وائرس کے حوالے سے رپورٹ کررہی تھیں کہ اسی دوران اُن کی صاحبزادی پیچھے سے آئی اور اپنی والدہ سے اسکرین پر نظر آنے والے شخص کے بارے میں پوچھنے لگی۔

نیوز ینکر کرسچن فراسر  نے براہ راست نشریات کے دوران ہی ڈاکٹر کلیرو سے پوچھا کہ اُن کی بیٹی کیا کہہ رہی تھیں اور اس کا نام کیا ہے؟۔

خاتون صحافی نے سوال کا جواب دیتے ہوئے بتایا کہ اُس کا نام اسکارلیٹ ہے اور وہ آپ کے بارے میں پوچھ رہی تھی۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بچی پیچھے سے آئی اور اُس نے باآواز بلند پوچھا کہ ’ممی ان کا نام کیا ہے‘۔

بچی کا سوال سُن کر اینکر نے فوراً اپنا نام بتایا یوں ایک سنجیدہ پروگرام میں بچی کی انٹری ہوئی اور پھر پروگرام کا موضوع ہی تبدیل ہوگیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں