وفاقی حکومت این ایف سی ایوارڈ دینا نہیں‌چاہتی، مراد علی شاہ -
The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت این ایف سی ایوارڈ دینا نہیں‌چاہتی، مراد علی شاہ

کراچی: وزیر خزانہ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی نیت سے لگ رہا ہے کہ وہ این ایف سی ایوارڈ نہیں دینا چاہتی، دو سال گزرنے کے باوجود وفاق نے اب تک این ایف سی ایوارڈ نہیں دیا، اسحاق ڈار اپنی آئینی ذمہ داری ادا نہیں کر رہے۔

پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مراد صوبائی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت نے 561 ارب روپے دینے کا وعدہ کیا ہے جو تاحال پورا ہونے کا منتظر ہے، رواں مالی سال سندھ کے وفاق کی جانب سے112ارب روپے واجب الادا ہیں،سندھ کو رواں سال 494 ارب کے بجائے 382 ارب روپے ملے ہیں۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ زرعی ٹیکس کی وصولی میں کامیابی نہیں ہوئی، دو ماہ میں اسٹیک ہولڈرز سے میٹنگ کے بعد زرعی ٹیکس کی وصولی بڑھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت اگست سے کراچی کو 100 میگاواٹ بجلی فراہم کرے گی،صوبائی حکومت نے نور ی آباد سے اپنی ٹرانسمیشن لائن تیار کی ہے مزید برآں کراچی کی10ارب روپے کی اسکیموں کے لیے یکم جولائی سے رقم فراہم کرنا شروع کردیں گے۔

انہوں نے وضاحت دی کہ پراپرٹی ٹیکس میں اضافہ نہیں کیا گیا، وزیر اعلیٰ ہاؤس کے بجٹ میں کوئی بڑا اضافی نہیں ہوا، ہیلی کاپٹر کی خریداری کے لیے ایک ارب روپے مختص کیے ہیں

مراد علی شاہ نے مزید کہا کہ سرکاری ٹھیکے داروں کو سیلز ٹیکس میں چھوٹ دی جائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں