بھارت میں باحجاب مسلمان خاتون کوملازمت دینے سے انکار -
The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں باحجاب مسلمان خاتون کوملازمت دینے سے انکار

نئی دہلی : بھارت میں مسلمان دشمنی عروج پر ہے ، باحجاب مسلمان خاتون کو ملازمت دینے سے انکار کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں مسلمان دشمنی میں ہرگزرتے دن کے ساتھ کمی کے بجائے اضافہ ہورہا ہے، نئی دہلی میں مسلمان خاتون کوحجاب لینے کی وجہ سے ملازمت دینے سے انکارکر دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ستائیس سالہ ندال زویا نے دارالحکومت نئی دہلی کے ایک یتیم خانے میں ملازمت کی درخواست دی تھی۔

یتیم خانے کی انتظامیہ نے زویا کوملازمت دینے سے انکارکرتے ہوئے کہا کہ حجاب کے باعث دور سے ہی پتا چلتا ہے کہ وہ مسلمان ہیں۔

انہوں نے زور دیا کہ وہ دارالطفال میں کسی قسم کی مذہبی تفریق روا نہیں رکھنا چاہتے حتی کہ وہاں ہندو ازم کا بھی کوئی عمل دخل نہیں ہوگا اور یتیم خانے کے اندر کسی قسم کی مذہبی سرگرمیوں کی اجازت نہیں دیں گے۔

انتظامیہ نے مزید کہا کہ انہوں نے ایک دوسرے مسلم لڑکی کو ملازمت پر رکھ لیا کر لیا ہے، جو مذہبی سوچ سے آزاد ذہنیت کے ساتھ جدید خیالات رکھتی ہیں۔

خیال رہے زویا نے سوشل ورک میں ماسٹرزڈگری حاصل کی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں