قائد سے منافقت کرنے والے عوام سے سچ نہیں بول سکتے، مصطفیٰ کمال
The news is by your side.

Advertisement

قائد سے منافقت کرنے والے عوام سے سچ نہیں بول سکتے، مصطفیٰ کمال

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال نے کہا ہے کہ تین سو ارب میں سے ایک فیصد بھی کھاتا تو آرام دہ زندگی گزارتا، ہم نے قومیت اور لسانیت کی سیاست کے باب کو ختم کیا، قائد سے منافقت کرنے والے عوام سے سچ نہیں بول سکتے۔

ورکرز فیڈریشن کے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مصطفی کمال نے کہا کہ ہم نے کسی بھی قوم مسلک اور زبان کے لوگوں سے دشمنی نہیں کرنی 31 دن کی پارٹی تھی اور سامنے سب ایک تھے لیکن عوام نے ہمارا ساتھ دیا اور باغ جناح کے جلسے میں شرکت کر کے پنڈال بھر کے دکھایا۔

پڑھیں: ’’ کچرا اٹھانے اور صفائی کے لیے اختیارات کی ضرورت نہیں، مصطفیٰ کمال ‘‘

انہوں نے کہا کہ نام نہاد قیادت اپنے مفادات کی سیاست ختم نہیں کر سکتے، اپنے قائد سے منافقت کرنے والے عوام سے سچ کس طرح بول سکتے ہیں، کراچی کے عوام ایسے تمام عناصر کو مسترد کرچکے ہیں۔

مصطفیٰ کمال نے کہا کہ 29 جنوری کو تبت سینٹر پر جلسہ گاہ ہے اُس میں بھی عوام کی بڑی تعداد شریک ہوگی، ہمارے ورکرز گلی گلی محلے محلے لوگوں کو جلسے کی دعوت دے رہے ہیں اور ہم کھلے دل کا مظاہرہ کرتے ہوئے دیگر جماعتوں کو جلسے میں شرکت کی دعوت دے رہے ہیں۔

مزید پڑھیں: ’’ ایم کیو ایم پاکستان کا مصطفیٰ کمال کو ہرجانے کا نوٹس ‘‘

پی ایس پی کے سربراہ کا کہنا تھا ہماری واپسی کا مقصد لڑائی نہیں بلکہ سب کو ساتھ لے کر چلنا ہے، غلط راہ پر چلنے والوں کو صحیح کرنے کا کام حکومت وقت کا ہوتا ہے مگر اب یہ کام ہماری جماعت کررہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں