The news is by your side.

Advertisement

پرویز مشرف کے کیس پر سیاست ہرگز نہیں ہونی چاہیے، مصطفیٰ کمال

کراچی : پاک سر زمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ پرویز مشرف کے کیس پر سیاست ہرگز نہیں ہونی چاہیے، آرٹیکل 6 پر عملدرآمد اس کی پوری روح کے ساتھ کیا جائے۔

یہ بات انہوں نے کراچی کی تاجر برادری کے نمائندہ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی عدالتی فیصلہ آمریت کی راہ میں رکاوٹ ثابت نہیں ہو سکتا، فیصلے پر عوام اور اداروں کا ردعمل اطمینان بخش ہے، پرویز مشرف کے حق میں پوری قوم کے ساتھ افواج پاکستان اٹھ کھڑی ہے۔

سید مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ہم جنرل مشرف کے خلاف فیصلے کو مسترد کرتے ہیں،اگر آرٹیکل 6 پر عملدرآمد کرنا ہی ہے تو اس کی پوری روح کیساتھ عمل کیا جائے۔

اس حساب سے کم ازکم 500 افراد کو پھانسی کی سزا ہونی چاہیے، ایک فرد واحد کو نشانہ نہیں بنایا جاسکتا، پیرا گراف نمبر66 نے جج کی ذہنیت اور اس بات کو واضح کردیا ہے کہ فیصلے میں ذاتی عناد، غصے اور دشمنی کا عنصر موجود ہے جس سے پورے کیس کی روح متاثر ہوچکی ہے۔

اُنہوں نے کہا کہ قابل تشویش بات ہے کہ جمہوریت کو بہترین انتقام قرار دینے والی پاکستان پیپلز پارٹی نے کبھی جنرل ضیاءالحق کے متعلق وہ زہر نہیں اگلا جو وہ جنرل پرویز مشرف کے خلاف اگلتی ہے جبکہ جنرل ضیاء الحق نے تو پیپلز پارٹی کے قائد ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی پر چڑھا دیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں کوئی بھی فیصلہ لینے سے پہلے جنرل پرویز مشرف کی ملک کیلئے خدمات کو بھی مدنظر رکھنا ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں