The news is by your side.

Advertisement

ریاض میں گمنام قبروں کی دریافت نے کھلبلی مچادی

حکام نے علاقے کا دورہ کیا تو قبریں کھول کر خالی کی جاچکی تھیں

ریاض: سعودی دارالحکومت ریاض کے ایک آباد علاقے میں 10 گمنام قبریں دریافت ہوئی ہیں، واقعہ رپورٹ ہونے پر حکام نے علاقے کا دورہ کیا تو قبریں کھول کر خالی کی جاچکی تھیں۔

سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض کے ایک علاقے سے نامعلوم افراد کی 10 قبریں دریافت ہوئی ہیں۔ انجانی قبروں کی دریافت نے پورے علاقے میں کھلبلی مچا دی ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق ریاض کی بلدیاتی کونسل کے رکن ابراہیم فہید العنزی مشرقی ریاض کا دورہ کر رہے تھے جہاں ایک مقام پر اچانک ایک احاطے کے اندر وہ 10 قبریں دیکھ کر حیران رہ گئے۔

العنزی کے مطابق احاطے کے 4 دروازے تھے مگر سب کے سب کھلے ہوئے تھے۔ یہ مقام النظیم سے 9 کلو میٹر مشرق میں واقع ہے۔

انہوں نے کہا کہ زیادہ حیرت اس وقت ہوئی جب دوبارہ اس جگہ کا دورہ کیا تو پتا چلا کہ وہ قبریں ساری کی ساری کھلی ہوئی تھیں اور ان میں کچھ بھی نہیں تھا۔ اس سے لگتا ہے کہ اس کے پیچھے کوئی راز ہے۔

العنزی کا کہنا تھا کہ حیران کن بات یہ ہے کہ یہ احاطہ رہائشی محلوں اور وہاں موجود فیکٹریوں کے قریب واقع ہے۔

العنزی نے فوری طور پر ایک خط بلدیاتی کونسل کو لکھا، کونسل نے ریاض میونسپلٹی کو اس کی اطلاع دی لیکن ابھی تک اس حوالے سے کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔

ان کا کہنا ہے کہ قبروں کی دریافت کو 15 روز گزر چکے ہیں، ایک ہفتے قبل النظیم پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کروا کر پورے واقعہ کی تفصیلات بھی پیش کردی گئی ہیں۔

العنزی نے مزید کہا کہ یہ واقعہ ایسا نہیں جس پر خاموشی اختیار کی جائے۔ واقعہ کی تحقیقات اشد ضروری ہے۔

انہوں نے شبہ ظاہر کیا کہ اس میں غیر قانونی تارکین وطن کا ہاتھ ہوسکتا ہے، مذکورہ علاقے میں تارکین وطن بڑی تعداد میں آباد ہیں اور ان کی تعداد اندازاً 10 ہزار سے زائد ہوگی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں