The news is by your side.

Advertisement

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی پیشی سے متعلق نیب اعلامیہ جاری

اسلام آباد: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی پیشی سے متعلق نیب اعلامیہ میں کہا گیا وزیراعلیٰ سندھ سے نیب راولپنڈی میں ڈیڑھ گھنٹہ تفتیش  کی گئی، جوابات کی روشنی میں وزیراعلیٰ سندھ کودوبارہ بلانے کا فیصلہ کیاجائےگا، نیب کسی دباؤ کوخاطرمیں لائے بغیر بدعنوانی کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی پیشی سے متعلق نیب کا اعلامیہ جاری کردیا ہے، اعلامیہ میں کہا گیا وزیراعلیٰ سندھ سے نیب راولپنڈی میں ڈیڑھ گھنٹہ تفتیش کی گئی، ڈی جی کی سربراہی میں نیب کی سی آئی ٹی نےمقدمے سے متعلق سوال پوچھے، نیب کی سی آئی ٹی نے مقدمے سے متعلق تحریری سوالنامہ بھی دیا۔

نیب کا مقصد کسی کی دل آزاری نہیں ہے، شکایات ،جانچ پڑتال ،انکوائریوں اورتفتیش سےمتعلق قیاس آرائیوں سےگریزکیاجائے

نیب اعلامیہ

نیب اعلامیہ میں کہا گیا سوالنامے کے جوابات 2ہفتے میں نیب پنڈی میں فراہم کرنےکی ہدایت کی گئی ہے ، سوالنامے اور آج دیےگئے جوابات کا قانون کے مطابق جائزہ لیا جائے گا اور جوابات کی روشنی میں وزیراعلیٰ سندھ کودوبارہ بلانے کا فیصلہ کیا جائے گا۔

اعلامیے کے مطابق کیس کی انکوائری براہ راست چیئرمین نیب کی نگرانی میں جاری ہے ، نیب کسی دباؤ کوخاطرمیں لائے بغیر بدعنوانی کے خاتمے کے لیے کوشاں ہے، نیب  قانون کےمطابق ہر شخص کا احترام کیاجاتاہے۔

نیب اعلامیہ میں کہا گیا نیب کا مقصد کسی کی دل آزاری نہیں ہے، شکایات ،جانچ پڑتال  ،انکوائریوں اورتفتیش سےمتعلق قیاس آرائیوں سےگریزکیاجائے، بے بنیاد او رمن گھڑت خبروں پر قانونی کارروائی کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیں : جعلی اکاؤنٹس کیس : وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بیان ریکارڈ کرادیا

اس سے قبل جعلی اکاؤنٹس کیس میں وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ ایک گھنٹےکی تاخیرسے نیب ہیڈکوارٹرز پہنچے تو نیب کی 6رکنی ٹیم وزیراعلیٰ سندھ سے ٹھٹھہ، دادو شوگرملز کیس میں پوچھ گچھ کی ، تحقیقاتی ٹیم کےسربراہ ڈی جی نیب عرفان منگی خود بیان ریکارڈ کیا جبکہ مراد علی شاہ کو تحریری سوال نامہ بھی دیا گیا۔

خیال رہے نیب نے وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کو 26 مارچ کو طلب کیا تھا لیکن مراد علی شاہ نے 26 کی بجائے 25 مارچ کو پیش ہونےکافیصلہ کیا تھا،وزیراعلیٰ سندھ کو ٹھٹھہ، دادوشوگرملز کیس میں ریکارڈ سمیت طلب کیا گیا ہے۔

یاد رہے نیب راولپنڈی نے 20 مارچ کو وزیراعلیٰ سندھ کی طلبی کا نوٹس جاری کیا تھا، ذرائع کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ سندھ کو سکرنڈ،کھوسکی،دادو، ٹھٹھہ، پنگریو شوگرملز کو سبسڈی دیے جانے کے معاملے پر طلب کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق سندھ حکومت نےاومنی گروپ کی شوگر ملز کو اربوں روپے کی سبسڈی دی جس کے باعث قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا، قومی احتساب بیورو شوگر ملز کو دی جانے والی سبسڈی کےمعاملے پر بھی تحقیقات کررہا ہے، جس کے دوران بہت سی اہم باتیں سامنے آئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں