نیب نے 2200 ملین روپے بدعنوان عناصرسے لے کرمتاثرین کو واپس کیے
The news is by your side.

Advertisement

نیب نے 2200 ملین روپے بدعنوان عناصرسے لے کرمتاثرین کو واپس کیے

لاہور: چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاویداقبال نے نیب لاہور کے دفتر کا دورہ کیا، جہاں ڈی جی نیب کی جانب سے میگا کرپشن کیسزپر انھیں بریفنگ دی گئی.

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب کو میگاکرپشن کیسز پر بریفنگ دی گئی، جس میں انھیں 56 کمپنیز کیس، ایزگارڈ نائن سمیت اہم کیسز سے آگاہ کیا گیا.

چیئرمین نیب کو بریفنگ دی گئی کہ 2200 ملین روپے بدعنوان عناصرسے لے کرمتاثرین کو واپس کئے ہیں، ساتھ ہی 300 بدعنوان عناصرکو گرفتار کیا گیا.

ساتھ ہی اورنج لائن اور 56 کمپنیوں میں مبینہ کرپشن کی تحقیقات میں پیش رفت پربریفنگ دی گئی.


نیب کا15 لاکھ یا اس سے زائد تنخواہ لینے والے سرکاری افسروں کے گرد گھیرا تنگ

اس موقع پر چیئرمین نیب نے کہا کہ مقدمات مقررہ مدت میں مکمل کئے جائیں،اس ضمن میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی.

چیئرمین نیب کی جانب سے نیب بیوروکی کارکردگی کو سراہا گیا.

یاد رہے کہ نیب نے لاکھوں روپے تنخواہ لینے والے سرکاری افسران کے گرد گھیراتنگ کردیا ہے اور سرکاری افسروں کے خلاف تحقیقات کے لئے ریجنل آفسز کو خط لکھا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں