جعلی شناختی کارڈ بنانیوالے نادرا کے 18 ملازمین پرمقدمات، 8 گرفتار -
The news is by your side.

Advertisement

جعلی شناختی کارڈ بنانیوالے نادرا کے 18 ملازمین پرمقدمات، 8 گرفتار

اسلام آباد: جعلی شناختی کارڈ بنانے والے نادرا کے آٹھ ملازمین کو گرفتار کرلیا گیا، تفصیلات کے مطابق وزیر داخلہ کے حکم پر جعلی شناختی کارڈ بنانے والے موجودہ اور پچھلی حکومتوں کے ادوار میں منظم طریقہ کار کے تحت ہزاروں جعلی شناختی کارڈ جاری کرنے والوں کے خلاف ملک گیر کریک ڈاؤن شروع کیا گیا ہے۔

اس سلسلے میں 18 نادرا اہلکاروں کیخلاف مقدمات درج کئے گئے ہیں، مقدمے کے اندراج کے بعد نادرا کے 8 ملازمین کو گرفتار کیا گیا ہے،جبکہ دیگر دس ملازمین کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

نادرا کے گرفتار ملازمین کی نشاندہی گذشتہ تین ماہ سے جاری شناختی کارڈز کی تصدیقی مہم کے ذریعے ہوئی تھی۔

اس حوالے سے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ یہ انتہائی حساس اور قومی سلامتی کا مسئلہ ہے، نادرا کو جعل سازوں اور پاکستان کی شہریت بیچنے والوں سے پاک کردیا جائے گا، راستے میں آنے والی کوئی رکاوٹ یا سفارش قبول نہیں کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ جعلی شناختی کارڈ بنانے والوں کیخلاف عید کے بعد دوسرا مرحلہ شروع ہوگا جس میں نادرا کے مزید اہلکاروں کی گرفتاریاں ہونگی۔ اس عمل کو چھ ماہ سے پہلے مکمل کر لیا جائے گا۔

تیسرے مرحلے میں جعلی کارڈ بنوانے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے گی۔ وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار نے کہا کہ عوام اورمیڈیا کی معاونت کا شکر گزار ہوں۔

پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ قانونی دباؤ کے تحت تقریبا 1700 افراد نے رضا کارانہ طور پر اپنے جعلی شناختی کارڈ واپس کیے، اس سے پہلے اس قسم کی کوئی ایک مثال بھی نہیں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں