سندھ کابینہ کے لیے اڑتالیس گھنٹوں میں نام فائنل ہونے کا امکان -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ کابینہ کے لیے اڑتالیس گھنٹوں میں نام فائنل ہونے کا امکان

کراچی: صوبہ سندھ کی کابینہ کے لیے آئندہ 48 گھنٹوں کے دوران نام فائنل کر لیے جائیں گے، اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے عہدوں کے لیے بھی ناموں پر مشاورت کی جا رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کی جانب سے آئندہ اڑتالیس گھنٹوں میں سندھ کی کابینہ کے لیے نام فائنل کر لیے جائیں گے، ذرائع کا کہنا ہے کہ اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے ناموں پر بھی مشاورت ہو رہی ہے۔

ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی وزیر بلدیات کے لیے مضبوط امیدوار ہیں، کہا جا رہا ہے کہ ڈپٹی اسپیکر اسمبلی بھی کراچی سے ہوگا۔

دوسری طرف بلوچستان میں حکومت سازی کے لیے اہم اجلاس آج کوئٹہ میں ہوگا، اجلاس میں عہدوں کی تقسیم کے حوالے سے غور کیا جائے گا۔

مراد علی شاہ کے دوبارہ وزیرِ اعلیٰ بننے کا امکان، اپوزیشن لیڈر کے لیے فردوس شمیم کا نام فائنل

واضح رہے کہ انتخابات 2018 میں سندھ میں پاکستان پیپلز پارٹی کو اکثریت حاصل ہے، دوسری طرف پاکستان تحریکِ انصاف کی جانب سے اپوزیشن لیڈر کے لیے فردوس شمیم نقوی کا نام فائنل کیا گیا ہے۔

سندھ میں حکومت سازی کے لیے پی پی نے تیاریاں مکمل کر لی ہیں، غالب امکان ہے کہ مراد علی شاہ ایک بار پھر سندھ کے وزیرِ اعلیٰ کا منصب سنبھالیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں