The news is by your side.

Advertisement

نیشنل ہیلتھ پروگرام کو قبائلی علاقوں تک وسعت دی جارہی ہے، خرم دستگیر

اسلام آباد : وفاقی وزیر تجارت انجینئر خرم دستگیر خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کو ملک کے دور دراز علاقوں تک وسعت دی جارہی ہے۔

اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کو سکردو ، کیچ اور لورالائی میں پروگرام پر عملدرآمد کیلئے تیاری کیلئے ہدایت کردی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعظم نیشنل ہیلتھ پروگرام کی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے بتایا کہ پنجاب میں ہیلتھ پروگرام کا آغاز جنوبی پنجاب سے کیا جا رہا ہے اور رحیم یار خان میں لوگوں کی رجسٹریشن کا عمل شروع ہے ۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ہیلتھ پروگرام کو قبائلی علاقوں تک وسعت دینے کیلئے انتظامی رکاوٹیں دور کی جائیں ، جن دور دراز علاقوں میں اچھے ہسپتال میسر نہیں ہیں وہاں ملٹری ہسپتالوں کو پینل میں شامل کرنے کیلئے حکام سے مذاکرات کئے جائیں تاکہ ان علاقوں کے لوگوں کو صحت کی اچھی سہولیات میسر ہوں۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ اسلام آباد، کوئٹہ اور مظفرآباد میں 3,724افراد کو چھوٹی بڑی طبی سہولیات فراہم کی گئی ہیں جن پر 6کروڑ 48لاکھ روپے کے کلیم بنے ہیں،ہیلتھ پروگرام کے تحت اسلام آباد میں سات، مظفرآباد میں سات اور کوئٹہ میں پانچ ہسپتالوں کے ذریعے طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں جن میں اضافہ متوقع ہے۔

اس وقت سٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے تحت اس پروگرام میں 13,93,078افراد کو رجسٹر کیا گیا ہے ، جنھیں جلد ہی طبی سہولیات کی فراہمی کا سلسلہ شروع ہو جائے گا۔

اجلاس کو اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کی چیئرپرسن نرگس گلو نے بریفنگ دی۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں