پاکستان کی خوش حالی امن و استحکام، قانون کی عمل داری میں ہے: قومی سلامتی کمیٹی
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی خوش حالی اور امن قانون کی عمل داری میں ہے: قومی سلامتی کمیٹی

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اہم اجلاس میں‌ ملکی سلامتی اور داخلی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا.

تفصیلات کے مطابق آج 6 اکتوبر کو ہونے والا قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس تین گھنٹے جاری رہا.

اجلاس کے اعلامیہ کے مطابق وزیراعظم نے دورہ چین سے متعلق کمیٹی ارکان کو آگاہ کیا، اجلاس میں ملکی سلامتی اوردفاع کے عزم کا اظہار کیا گیا.

سلامتی کمیٹی نے کہا کہ پاکستان کی خوش حالی امن و استحکام اور قانون کی عمل داری میں ہے، ملکی سلامتی و ترقی امن اور  استحکام سے مشروط ہے.

تین گھنٹے جاری رہنے والے اس طویل اجلاس میں ملک کی داخلی سلامتی کی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کیا گیا اور امن وسلامتی سے متعلق سیکیورٹی اداروں کو خراج تحسین پیش کیا گیا.

اجلاس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، ڈی جی آئی ایس آئی اور ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھی شرکت کی.

اجلاس میں وفاقی وزرا پرویز خٹک، شاہ محمود قریشی ،اسد عمر، فوادچوہدری اور وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یارآفریدی بھی موجود تھے.

یاد رہے کہ سلامتی کمیٹی کے اجلاس سے قبل وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ میں ون ٹو ون ملاقات ہوئی، جس میں اہم امور پر تبادلہ خیال ہوا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں