The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کو پمز سے اڈیالہ جیل منتقل کر دیا گیا

راولپنڈی: اڈیالہ جیل کے قیدی سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کو صحت بہتری پر اسپتال سے واپس جیل کی کوٹھری منتقل کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پمز کے ڈاکٹروں نے آج ایک بار پھر تفصیلی معائنے کے بعد نواز شریف کی صحت تسلی بخش قرار دی، جس کے بعد انھیں جیل منتقل کر دیا گیا۔

پمز اسپتال کے ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے میڈیکل ٹیسٹ کی رپورٹس کلیئر آئی ہیں، مریض کی حالت بہتر ہونے کی وجہ سے واپس اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا۔

پمز کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کا بلڈ پریشر اور شوگر لیول ہائی تھا جس کی وجہ سے انھیں اسپتال داخل کیا گیا تھا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں ایگزیکٹو ڈائریکٹر پمز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کا بلڈ پریشر اور شوگر لیول نارمل ہو گیا ہے، مریض کو مزید کوئی شکایت نہیں تھی اس لیے انھیں ڈسچارج کر دیا گیا۔

نوازشریف کی طبیعت بتدریج بہتر ہونے لگی

قبل ازیں پمز میڈیکل بورڈ نے مجرم نواز شریف کا دوبارہ تفصیلی طبی معائنہ کیا، ڈاکٹرز کی تجویز پر مریض کا الٹرا ساؤنڈ، ایکو اور بلڈ ٹیسٹ کیے گئے۔

ڈاکٹرز نے معائنے کے بعد نواز شریف کو کمرے میں چہل قدمی کی بھی ہدایت کی، میڈیکل بورڈ نے کلینکل ٹیسٹ کی رپورٹس پر مشاورت کے بعد نواز شریف کو ڈسچارج کرنے کا فیصلہ کیا۔

میڈیکل بورڈ کی رپورٹ اے آر وائی نیوز پر


پمز کے میڈیکل بورڈ کی مکمل رپورٹ اے آر وائی نیوز نے نشر کر دی، میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کو مکمل صحت مند قرار دے دیا، میڈیکل رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مریض کے تمام کلینیکل ٹیسٹ نارمل ہیں۔

رپورٹس کے مطابق نواز شریف کا بی پی، شوگر، کریٹنین، یوریا لیول نارمل ہونے کے ساتھ ساتھ نبض کی فی منٹ رفتار بھی نارمل ہے، جب کہ ای سی جی، ایکو کارڈیو گرام اور الٹرا ساؤنڈ بھی نارمل آیا ہے۔

مریض کے لیے ہدایات


پمز کے پانچ رکنی میڈیکل بورڈ نے اڈیالہ کے قیدی نواز شریف کو متعدد ہدایات بھی جاری کر دی ہیں، ان ہدایات کے مطابق مریض کو روزانہ خالی پیٹ شوگر لیول مانیٹر کرنی ہے۔

ڈاکٹرز نے کہا کہ نواز شریف پہلے سے زیرِ استعمال ادویات جاری رکھیں، ڈاکٹرز حسبِ ضرورت مریض کا چیک اپ کرنے اڈیالہ جائیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں