The news is by your side.

Advertisement

پی پی اورپی ٹی آئی کی سیاست کامقصدصرف عوام کودھوکہ دینا ہے‘ نواز شریف

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف کا کہنا ہے کہ عدالتی اصلاحات ہمارے آئندہ الیکشن کے منشورکا حصہ ہوں گی، اصلاحات وقت اورقوم کی ضرورت ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف نے احتساب عدالت میں غیررسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تحریک عدل کے لیے کسی انٹرنیشنل فرم کی خدمات نہیں لی، تحریک عدل کے لیے ہمارے پاس اپنا مواد بہت ہے۔

نوازشریف نے کہا کہ ہم کوئی نیب تونہیں ہیں جوعالمی فرم کی خدمات لیں، اصلاحات کا دروازہ ہروقت کھلا رہنا چاہیے، عام حالات میں بہت ساری چیزیں سامنے نہیں آتی جبکہ امتحان کے دورمیں بہت ساری چیزیں واضح ہوجاتی ہیں۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف نے کہا کہ مجھے مسلم لیگ ن کی صدارت سے ہٹانےکا کیا مقصد ہوسکتاہے؟ انہوں نے کہا کہ شفاف انتخابات کے لیے اپنا کردارادا کریں گے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پی پی اورپی ٹی آئی کی سیاست کا مقصد صرف عوام کو دھوکہ دینا ہے، یہ ہروقت امپائرکی انگلی کی طرف دیکھتے ہیں اور ہمیشہ سے چوردروازے سے آنے کے خواہشمند ہیں۔

نوازشریف نے کہا کہ ان کی نوبت یہ آگئی 100 اور 200 لوگوں کے جلسےکررہے ہیں، اورکریں اتحاد اور سنجرانی کو چیئرمین سینیٹ بنوائیں، انہوں نے سوال کیا کہ کون ہے یہ سنجرانی؟۔

مسلم لیگ ن کے قائد نے کہا کہ 6 لوگوں کے گروپ نے نامزد کیا وہ آتے ہی چیئرمین سینیٹ بن گیا،ان کے پیچھےجوہیں وہ سب کوپتہ ہے سینیٹ الیکشن میں ہرانا تھا تواپنے زور سے ہراتے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں واجد ضیاء کا بیان آج دوسرے روز بھی قلمبند کیا جا رہا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں