The news is by your side.

Advertisement

نگراں وزیراعظم ناصرالملک بےمثال شخصیت کےحامل ہیں‘ نوازشریف

اسلام آباد : سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ صرف ایک بندے کے خلاف انکوائری سے کچھ نہیں ہوگا، مشاورت کے ساتھ نیشنل انکوائری کمیشن بننا چاہیے جس میں عدلیہ، اسٹیبلشمنٹ، پارلیمنٹ کی نمائندگی ہو۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پرسابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ نگراں وزیراعظم ناصر الملک بے مثال شخصیت کے حامل ہیں، بطورجج اورچیف جسٹس ان کی خدمات سرفہرست ہیں۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف نے کہا کہ ناصرالملک کی تعیناتی کوسراہنا چاہیے، وہ قابل احترام آدمی ہیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پرویز مشرف، اسد درانی اورشاہدعزیزکی کتابیں دیکھ لیں، ضرورت اس امرکی ہے اب اس چیزکی تہہ تک پہنچنا ہوگا، ایک نیشنل انکوائری کمیشن بننا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ صرف ایک بندے کے خلاف انکوائری سے کچھ نہیں ہوگا، مشاورت کے ساتھ نیشنل انکوائری کمیشن بننا چاہیے جس میں عدلیہ، اسٹیبلشمنٹ، پارلیمنٹ کی نمائندگی ہو۔

صحافی نے سوال کیا کہ تین مرتبہ وزیراعظم بنے، مارشل لاء کا راستہ کیوں نہیں روکا؟ جس پر سابق وزیراعظم نے جواب دیا کہ میراخیال ہےہم نے شقیں ختم کیں، کچھ تبدیلی کی ہے۔

پہلے ہائی جیکنگ کا الزام لگایا گیا اب خیالی تنخواہ اوراقامےکا کیس ہے‘ نوازشریف

خیال رہے کہ گزشتہ روز سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ اقامہ والے اور ہائی جیکنگ والے مقدمے میں کوئی فرق نہیں ہے، دونوں مقدمات کو عوام نے مسترد کر دیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں