The news is by your side.

Advertisement

متحدہ عرب امارات، سوشل میڈیا کے زیادہ استعمال کے طالب علموں پر اثرات

دبئی: ایک سروے رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ متحدہ عرب امارات میں طلباء و طالبات روزانہ 5 گھنٹے سے زائد سوشل میڈیا کا استعمال کرتے ہیں۔

عرب میڈیا کے مطابق دبئی میں واقعہ کینیڈین یونیورسٹی نے سوشل میڈیا کے استعمال کے دماغ پر اثرات سے متعلق ایک سروے کیا جس میں یہ بات سامنے آئی کہ یو اے ای میں طلبا و طالبات روزانہ 5 گھنٹے سوشل میڈیا پر صرف کرتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق 69.7 فیصد طلبا و طالبات روزانہ کی بنیاد پر 5 گھنٹے یا اس سے زائد سوشل میڈیا کا استعمال کرتے ہیں۔

ملٹی میڈٰیا کی طالبہ فاطمہ علی نے کہا کہ سوشل میڈیا کے حوالے سے حالیہ تحقیق ہماری آنکھیں کھولنے کے لیے کافی ہے، سوشل میڈیا کا حد سے زیادہ استعمال براہ راست دماغی بیماریوں میں مبتلا کردیتا ہے۔

مزید پڑھیں: انسٹاگرام صارفین کو ذہنی دباؤ سے نکالنے کے لیے کوشاں

پروفیسر اوڈی امیزی نے کہا کہ سوشل میڈیا کے استعمال کے سبب طلباء ثقافتی اور کھیلوں کی سرگرمیوں سے دور ہورہے ہیں اور اس کا بے جا استعمال ان کے دماغ کو نقصان پہنچا رہا ہے۔

ڈاکٹر مدینہ کا کہنا تھا کہ اسپتالوں کو بھی سوشل میڈیا پلیٹ فارم استعمال سے ہونے والے نقصانات کے حوالے سے اہداف، کلیدی پیغامات اور برانڈ کی تشہیر کی وضاحت کرنی ہوگی۔

یاد رہے کہ چند ماہ قبل شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ سوشل میڈیا کئی طرح سے نوجوانوں پر اثر انداز ہورہا ہے کیونکہ یہ تنقید، احساس کمتری اور دیگر نفسیاتی عارضوں کی وجہ بن رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں