The news is by your side.

Advertisement

کرونا کی نئی قسم نے کتنی امریکی ریاستوں میں پنجے گاڑ دیے؟

واشنگٹن: عالمگیر سطح پر نہایت مہلک ثابت ہونے والے نئے کرونا وائرس کو وِڈ 19 کی نئی قسم نے اب امریکا کی 20 ریاستوں میں پنجے گاڑ دیے ہیں، یہ نئی قسم بھی نہایت ہلاکت خیز ثابت ہوئی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق برطانیہ میں سامنے آنے والے کرونا وائرس کا نیا اسٹرین امریکا کی بیس یا اس سے زیادہ ریاستوں میں موجود ہے، یہ بات امریکا کے نیشنل انسٹی ٹیوٹ برائے الرجی و متعدی امراض کے ڈائریکٹر فوسی نے کہی۔

انھوں نے جمعرات کو صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کرونا کا برطانیہ والا ویریئنٹ امریکا کی بیس سے زائد ریاستوں میں موجود ہے۔

واضح رہے کہ برطانیہ میں گزشتہ دسمبر میں ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے کو وِڈ 19 کے نئے ویریئنٹ کے بارے میں مطلع کیا تھا، جو پرانے ویریئنٹ سے 70 فی صد زیادہ تیزی سے پھیلتا ہے۔

کرونا وائرس کے نئے اسٹرین کے پیش نظر کئی ممالک نے اپنی سرحدیں بند کر دی ہیں اور برطانیہ کے سفر کو معطل کر دیا ہے، جس کی وجہ سے یہ زیادہ نہیں پھیل سکا ہے۔

امریکا میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے 28,544 نئے کیسز سامنے آئے جب کہ انفکیشن سے مزید 632 مریض ہلاک ہوئے.

اس سوال کا جواب کہ کرونا کی یہ نئی قسم زیادہ مہلک ہے؟ کا جواب سائنس دانوں نے نفی میں دیا ہے، تاہم وہ اس کی تیزی سے پھیلاؤ کی صلاحیت سے تشویش میں مبتلا ہیں، ڈاکٹر انتھونی فاؤچی نے کہا ہے کہ خطرہ یہ ہے کہ تیزی سے پھیلاؤ کی وجہ سے مزید کیسز سامنے آئیں گے اور بوجھ مزید بڑھے گا، اور اس سے طرح اموات میں بھی اضافہ ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں