نئی دہلی: زہریلی اسموگ خطرناک سطح پر، مصنوعی بارش کروانے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

نئی دہلی: زہریلی اسموگ خطرناک سطح پر، مصنوعی بارش کروانے کا فیصلہ

نئی دہلی: بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں زہریلی اسموگ کا راج جاری ہے۔ اسموگ کی وجہ سے دہلی میں اسکول بھی بند کروا دیے گئے۔ حکام نے زہر آلود اسموگ سے بچنے کے لیے مصنوعی بارش کروانے کا منصوبہ بنایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں اسموگ اپنی خطرناک ترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔ ماہرین کے مطابق نئی دہلی کی فضا میں سانس لینا دن میں 45 سگریٹ پینے کے برابر ہوگیا ہے۔

مزید پڑھیں: زہریلی اسموگ سے کیسے بچا جائے؟

دہلی کے وزیر اعلیٰ نے شہر کو گیس چیمبر قرار دے دیا جبکہ انتظامیہ نے دارالحکومت میں اسموگ ایمرجنسی بھی نافذ کردی جس کے تحت اسکول بند کروا دیے گئے۔

انتظامیہ کی جانب سے لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی گئی ہے، شہر میں بڑے ٹرکوں کا داخلہ بھی بند کردیا گیا ہے جبکہ بیشتر تعمیراتی کام بھی فی الحال روک دیے گئے ہیں۔

مزید پڑھیں: زہریلی اسموگ سے خود کو بچائیں

ماہرین کے مطابق اس خطرناک زہریلی اسموگ میں سیسہ، سنکھیا اور پارے کے ذرات بھی شامل ہیں جو پھیپھڑوں کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا سکتے ہیں۔

بھارتی میڈیا کےمطابق حکومت اسموگ سے بچنے کے لیے دہلی میں مصنوعی بارش کروانے پر غور کر رہی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں