The news is by your side.

Advertisement

مقامی حکومتوں کانیاماڈل منفرداورعوام دوست ہوگا، وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ

پشاور:وزیراعلیٰ خیبرپختونخواکی زیرصدارت لوکل گورنمنٹ سسٹم سےمتعلق اجلاس ہوا ، جس میں عوام کو مضبوط بنانے والے بلدیاتی نظام کی بات کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق نئے لوکل باڈی نظام کے لیے ہونے والے اس اجلاس میں وزیراعظم کےمشیربرائےاسٹیبلشمنٹ ارباب شہزادکی بھی شرکت کی۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان کا کہنا تھا کہ مقامی حکومتوں کانیاماڈل منفرداورعوام دوست ہوگا، نیاماڈل حقیقی معنوں میں اختیارات کاارتکازختم کریگا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ نیاحکومتی ماڈل مقامی سطح پرعوام کومضبوط اوربااختیاربنائےگا۔ بتدریج عوامی شراکت داری پرمبنی جمہوریت کی طرف بڑھ رہےہیں  جس سے مقامی سطح پرمسائل کےحل سےعوام کی بےچینی،مایوسی ختم ہوگی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ نچلی سطح پرعوام کی فلاح وترقی کاایک مکمل،قابل عمل پلان ہوناچاہئے۔

وزیر اعلیٰ نے اجلاس میں کہا کہ نیالوکل گورنمنٹ ماڈل بل کی صورت میں اسمبلی سےپاس کیاجائے گا اور اس کے بعد اس کا اطلاق کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ خیبر پختونخواہ حکومت نے حکومت سازی کے تین ماہ مکمل ہونے پر آئندہ پانچ سال کے لیے ترقیاتی کاموں کی منصوبہ بندی کا اعلان کیا تھا جس کے تحت آئندہ 3سال میں پشاور میں 3میگاپارکس کاقیام عمل میں لانے ،حیات آبادکرکٹ اکیڈمی بنانے سمیت متعدد زشہری اور دیہی نوعیت کے منصوبوں کا اعلان کیا تھا

کےپی حکومت کے منصوبوں میں 4 ہزاریوتھ کونسلر،4ہزارخواتین کوولیج کونسل لیول پربااختیاربنانا اور عوامی احتساب،خدمات کے لئے سیاسی پارٹیوں سے 120 میئر کا انتخاب  بھی شامل ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں