ٹوبہ ٹیک سنگھ میں پودے لگانے کا نیا ریکارڈ قائم، سوات میں جنگلات کی کٹائی کا نوٹس -
The news is by your side.

Advertisement

ٹوبہ ٹیک سنگھ میں پودے لگانے کا نیا ریکارڈ قائم، سوات میں جنگلات کی کٹائی کا نوٹس

کمالیہ/پشاور: ضلع ٹوبہ ٹیک سنگھ کی تحصیل کمالیہ میں پودے لگانے کا نیا ریکارڈ قائم کیا گیا، جنگلات میں 42 سیکنڈز میں 16 ہزار پودے لگائے گئے۔ دوسری طرف وزیرِ اعلیٰ کے پی نے سوات میں جنگلات کی کٹائی کا نوٹس لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹوبہ ٹیک سنگھ کی تحصیل کمالیہ کے جنگلات میں شجر کاری مہم کے تحت 42 سیکنڈز میں 16 ہزار پودے لگا کر ایک نیا ریکارڈ قائم کر دیا گیا ہے۔

مقامی ڈپٹی کمشنر احمد خاور نے میڈیا کو بتایا کہ حکومت کی جانب سے شروع کی جانے والی شجر کاری مہم میں 16 ہزار مرد، خواتین اور طلبا نے حصہ لیا، سب نے مل کر ایک ہی وقت میں 16 ہزار پودے لگائے۔

ڈی سی خاور کا کہنا تھا کہ ضلع بھر میں شجر کاری مہم کے تحت 10 لاکھ پودے لگائے جائیں گے، اس مہم میں شہریوں نے جوش و خروش سے حصہ لیا، ہم مل کر پاکستان کو سرسبز و شاداب بنائیں گے۔


مزید پڑھیں:  ملک بھرمیں’’پلانٹ فار پاکستان‘‘کے نام سے شجرکاری مہم کا آغاز


دوسری طرف خیبر پختونخوا میں جنگلات کی کٹائی کے ایک واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے وزیرِ اعلیٰ کے پی نے متعلقہ حکام کو تحقیقات کی ہدایت جاری کر دی ہے۔

وزیرِ اعلیٰ محمود خان نے ڈی سی سوات کو ہدایت کی کہ سوات میں جنگلات کی کٹائی کے واقعے کی تحقیقات کر کے فوری طور پر رپورٹ پیش کریں۔


یہ بھی پڑھیں:  پورے پاکستان میں 10 ارب درخت لگانے کا ہدف ہے، وزیر اعظم


انھوں نے صوبے کے چیف سیکریٹری کو بھی ہدایت کی کہ ڈی ایف او سوات کو فوری طور پر معطل کر دیا جائے اور جنگلات کی کٹائی روکنے کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں۔

وزیرِ اعلیٰ نے کہا ’تحقیقات کر کے 24 گھنٹے میں رپورٹ پیش کی جائے، ہدایات کے با وجود درختوں کی کٹائی ناقابلِ برداشت ہے، صوبے میں جنگلات کی کٹائی پر پابندی کے فیصلے پر عمل در آمد کیا جائے۔‘

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں