The news is by your side.

Advertisement

سانحہ نیوزی لینڈ: آسٹریلوی شہری کا مسلمانوں سے منفرد انداز میں اظہار یکجہتی، ویڈیو وائرل

سڈنی: آسٹریلوی شہری نے کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر ہونے والی دہشت گردی کے واقعہ میں شہید اور زخمی ہونے والوں سے منفرد انداز میں اظہار یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جہاں مختلف ممالک میں سانحہ نیوزی لینڈ کی یاد میں شمعیں روشن کی جارہی ہیں اور شہید ہونے والے مسلمانوں کو خراج تحسین پیش کیا جارہا ہے وہیں ایک آسٹریلوی شہری نے بھی منفرد انداز میں مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیا ہے۔

آسٹریلوی شہری لیچ ڈرومونڈ نے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو شیئر کی جس میں سورج غروب ہوتے وقت واضح طور پر اذان کی آواز سنی جاسکتی ہے۔

لیچ ڈرومونڈ نے اپنے ویڈیو پیغام میں لکھا کہ میں دنیا بھر کے مسلمانوں کے ساتھ ہوں اور اپنے گھر میں غروب آفتاب کے وقت آذان کی ریکارڈنگ چلا رہا ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں کوئی مسلمان یا مذہبی شخص نہیں ہوں اور امید کرتا ہوں کہ میرے عمل کو برا نہیں سمجھا جائے گا، یہ میرا شہید ہونے والے نمازیوں سے اظہار یکجہتی ہے۔

آسٹریلوی شہری کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ویڈیو شیئر کرنے پر سراہا جارہا ہے، اسے اب تک 61000 افراد دیکھ چکے ہیں جبکہ 25 ہزار افراد نے ویڈیو کو ری ٹویٹ کیا اور 27000 افراد نے اس پر اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔

ایک صارف نے کہا کہ لیچ ڈرومونڈ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ آپ کا یہ عمل بہت ہی شاندار ہے جبکہ آسٹریلوی نے بھی ویڈیو پسند کرنے والوں کا شکریہ ادا کیا۔

دوسری جانب نیوزی لینڈ کے شہری شہیدوں کی یاد میں پھول رکھ رہے ہیں، پیغامات لکھ رہے ہیں، شہیدوں کی یاد میں موم بتیاں اور دیے جلا رہے ہیں۔

خیال رہے کہ دو روز قبل نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں آسٹریلوی شہری کی دو مساجد میں اندھا دھند فائرنگ کے نتیجے میں 50 شہری شہید ہوگئے تھے جن میں 9 پاکستانی بھی شامل ہیں۔

گزشتہ روز ملزم کو عدالت میں پیش کیا گیا اور جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں