The news is by your side.

Advertisement

تفتیشی ادارے انار کلی بازار میں دھماکہ خیز مواد رکھنے والے دہشت گرد تک نہ پہنچ سکے

لاہور : تفتیشی ادارے انار کلی بازار میں دھماکہ خیز مواد رکھنے والے دہشت گرد تک نہ پہنچ سکے تاہم حملہ آور کی ایک اور سی سی ٹی وی فوٹیج بھی منظر عام پر آ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق انار کلی بازار میں ہونے والے بم دھماکے کی تحقیقات میں پیش رفت نہ ہوسکی اور تفتیشی ادارے دھماکہ خیز مواد رکھنے والے دہشت گرد تک نہ پہنچ سکے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سیف سٹی کیمروں کی خرابی دہشت گرد کی عدم گرفتاری میں بڑی وجہ قرار دی گئی ہے ، دھماکے کے بعد سے تاحال قانون نافذ کرنے والے اداروں کو نجی کیمروں سے مدد ملی۔

انار کلی دھماکہ میں حملہ اور کی ایک اور سی سی ٹی وی سامنے آگئی ہیں، جس میں حملہ اور کو دھماکے سے قبل پینتیس منٹ تک انار کلی اور نیلا گنبد تک پیدل سفر کرتا رہا۔

فوٹیج کے مطابق حملہ اوور ایک بجکر چار منٹ پر انار کلی بازار میں داخل ہوا، اس نے سر پر ٹوپی اور منہ پر ماسک پہن رکھا تھا جبکہ پر پل رنگ کا ٹریک سوٹ اور کمر پر دھماکہ خیز مواد سے بھرا بیگ لٹکایا ہوا تھا۔

حملہ اور دھماکہ خیز مواد رکھنے کے بعد رکشہ میں سوار ہوکر سبزی منڈی اترا، قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سبزی منڈی کے قریب اٹھ ٹرکوں کو پوائنٹ آوٹ کیا تھا، تمام ٹرک کوئٹہ روانہ ہوئے تھے ، قانون نافذ کرنے والے اداروں نے کوئٹہ تک ان ٹرکوں کا پیچھا کیا۔

ذرائع کے مطابق حملہ اوور کسی ٹرک پر سوار نہیں ہوا تھا، حملہ آور کی تلاش میں پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سبزی منڈی میں سرچ آپریشن بھی کیا تھا ، تاحال حملہ آور اور اس کے نیٹ ورک کا پتہ نہ چلایا جاسکا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں