The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد ہائی کورٹ کا ہمالین ریچھوں کی عدم منتقلی پر تحریری فیصلہ جاری

اسلام آباد : چڑیا گھر میں موجود بیمار بھورے ریچھوں کی جوڑی ببلو اور سوزی سے متعلق اسلام آباد ہائی کورٹ نے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا، جس کے مطابق وزارت موسمیاتی تبدیلی اور وائلڈلائف نے حکم عدولی کی۔

وفاقی دارالحکومت کے مرغزار چڑیا گھر میں بد انتظامی کی وجہ سے وہاں موجود دو بیمار بھورے ریچھوں کو اسلام آباد ہائی کورٹ نے اردن منتقل کرنے کے احکامات جاری کئے تھے۔

محکمہ جنگلی حیات اور وزارت موسمیاتی تبدیلی نے عین روانگی سے قبل این سی او سی ہونے کے باوجود ان دونوں کو بیرون ملک بھجوانے سے انکار کردیا تھا۔ اس حوالے سے اسلام آباد ہائی کورٹ نے عدم منتقلی کیس کا تحریری فیصلہ جاری کردیا،چیف جسٹس اطہرمن اللہ کی جانب سے مذکورہ فیصلہ5صفحات پر مشتمل ہے۔

فیصلے کے متن میں کہا گیا ہے کہ وزارت موسمیاتی تبدیلی اور وائلڈ لائف نے عدالتی احکامات کی عدولی کی، وائلڈ لائف نےعدالت کو بتایا کہ دونوں ہمالین ریچھ صحت مند اور تندرست ہیں۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ہمالین ریچھ اگر صحت مند ہیں تو پھرانہیں دوسری جگہ کیوں منتقل کیا جارہا ہے؟ بتایا گیا تھا کہ وائلڈ لائف نے ریچھوں کو اردن منتقل کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ عدالت امید کرتی ہے کہ وائلڈ لائف بورڈ ہمالین ریچھوں کی بھلائی کیلئے فیصلہ کریگا، بورڈ نے عدالت کو بتائے بغیر ریچھوں کی منتقلی کا فیصلہ کیا۔

مزید پڑھیں : اسلام آباد چڑیا گھر کے بیمار ریچھوں کو رہائی نہ مل سکی 

فیصلے میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے وائلڈلائف مینجمنٹ بورڈ کو آئندہ سماعت سے قبل میٹنگ بلانے کا حکم دے دیا اور رجسٹرار آفس کو کیس کی دوبارہ سماعت کیلئے14دسمبر کو رکھنے کی ہدایت کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں