بدھ, مئی 22, 2024
اشتہار

نور مقدم کیس : مرکزی ملزم ظاہر جعفر کی سزائے موت کا حکم برقرار

اشتہار

حیرت انگیز

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے نور مقدم کیس میں مرکزی ملزم ظاہر جعفر کی سزائے موت کا حکم برقرار رکھا۔

تفصیلات کے مطابق نور مقدم کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے سزا کے خلاف اپیلوں پر فیصلہ سنا دیا۔

چیف جسٹس ہائی کورٹ کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے محفوظ فیصلہ سنایا، فیصلے میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے ظاہر جعفر کی سزا کا حکم برقرار رکھنے کا حکم دیا اور 2 شریک مجرمان کی سزا کے خلاف اپیلیں بھی مسترد کردیں۔

- Advertisement -

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سیشن عدالت کا فیصلہ برقرار رکھا اور ظاہر جعفر کو زیادتی مقدمے میں سزائے موت کا حکم دیا۔

یاد رہے اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کے جج عطا ربانی نے نور مقدم قتل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کو سزائے موت سنائی تھی۔

عدالت نے کیس کے شریک ملزمان جان محمد اور افتخار کو 10، 10 سال قید کی سزا سنائی تھی ، سزا پانے والا مجرم افتخار چوکیدار اور مجرم جان محمد مالی تھے۔

عدالت نے تھراپی ورکس کے ملزمان سمیت ظاہرجعفر کے والدین کو اعانت جرم کے الزام سے بھی بری کردیا تھا۔

Comments

اہم ترین

مزید خبریں